The news is by your side.

Advertisement

طوفانی بارشیں : ٹوئٹر پر “کراچی رین” ٹاپ ٹرینڈ بن گیا

کراچی : شہر قائد میں موسلا دھار بارش کے بعد نکاسی آب نہ ہونے کی وجہ سے بیشتر علاقے کمر کمر تک پانی میں ڈوبے ہوئے ہیں، اہلیان کراچی میں غم و غصہ کی لہر دوڑ گئی، ٹوئٹر پر “کراچی رین” ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی  میں بارش کے بعد شہر کی ساری شاہراہیں، گلیاں، بازار، ندی نالوں کا منظر پیش کر رہی ہیں، موٹر سائیکلیں، گاڑیاں، منہ زور پانی کے رحم پر کرم پر ہیں، بیشتر علاقوں کے مکینوں نے گھروں کی چھتوں پر پناہ لے رکھی ہے۔

اس حوالے سے سوشل میڈیا پر لوگ شہر کے حکمرانوں اور انتظامیہ پر اپنے غم و غصے کا اظہار مختلف انداز سے کررہے ہیں،  تصاویر اور ویڈیوز روشنیوں کے شہر کے ڈوبنے کی داستان سنارہی ہیں، ان کا کہنا ہے کہ یااللہ رحم فرما، بس بہت ہو گیا، یا تو حکومت کچھ کرے یا پھر گھر جائے۔

کراچی کی بارش میں صورتحال بگڑی تو شہری بھی بے قابو ہوگئے، دل کی بھڑاس جذباتی پوسٹ کرکے نکال لی، ایک دل جلے نے کاغذ کی کشتی میں بلاول بھٹو اور وزیرِ اعلی کو کشتی میں سوار کرایا۔

ایک اور ناراض صارف نے صدر، اردو بازار اور ایم اے جناح روڈ پر تیرتے کنٹینرز کی ویڈیوز شئیر کرکے غصے دکھایا، پوش علاقوں میں نکاسی کے نظام کا پول کھولتے ہوئے طارق روڈ اور ڈی ایچ کی ویڈیوز بھی پوسٹ کی گئیں۔

کچھ متاثرین نے پانی میں ڈوبے اپنے گھروں کی ویڈیوز شیئر کرکے صورتحال کی سنگینی بتائی اور ذمہ دار ناقص اور کرپٹ سندھ حکومت کو قرار دے دیا، اس طوفانی بارش میں ایک زندہ دل شخص کی پانی میں ڈوبنے کے باوجود تھمبز اپ کرنے کی ویڈیو بھی وائرل ہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں