The news is by your side.

Advertisement

سابق وزیر اعظم کا موجودہ وزیر اعظم کو مستعفی ہونے کا مشورہ

اسلام آباد :ڈاکٹریٹ کی اعزای ڈگری ملنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے موجودہ وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا.

تفصیلات کے مطابق کولمبو یونیورسٹی کی جانب سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کو اسلام آباد میں منعقد کردہ ایک پروقار تقریب میں ڈاکٹریٹ کی اعزازی سند دی گئی،یاد رہے راجہ پرویز اشرف ملک کی تیسری بڑی شخصیت ہیں جنہیں اس اعزاز سے نوازا گیا

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ کتنی بھی سنگین صورتِ حال ہو کبھی ملک سے باہر نہیں گیا،میں اُن لوگوں میں شامل ہوں جنہوں نے جان قربان کی مگر ملک سے فرار نہیں ہوئے

راجہ پرویز اشرف جنہیں رینٹل پاور ہاوس کیس کا سامنا ہے، نے استفسار کیا کہ حکومت ای سی ایل میں اُن کا نام ڈال کر کیا پیغام دینا چاہ رہی ہے؟

راجہ پرویز اشرف نے مزید کہا کہ سیاسی لوگوں کو نت نئے ہتھکنڈوں سے پریشان کیاجارہا ہے،پہلے بھی ملک کا وزیر اعظم ہوتے ہوئے مقدمات کا سامنا کیا،اب بھی نہیں بھاگوں گا۔

پانامہ پیپرز پر اپنا موقف پیش کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ہم اپوزیشن کی سب سے بڑی جماعت ہیں،لیکن متحدہ اپوزیشن کی سوچ پیش کر کے اصولی موقف اپنایا۔

سابق وزیرِ اعظم راجہ پرویز اشرف نے موجودہ وزیرِ اعظم کو یاد دلایا کہ جب زرداری دور کے پہلے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی پر الزامات لگے تو آپ نے مطالبہ کیا تھا،کہ تحقیقات کے مکمل ہونے تک وزیر اعظم گیلانی مستعفی ہوجائیں۔

اخلاقیات کا تقاضہ ہے کہ اب وزیر اعظم نوازشریف اپنے مشوروں پر خود عمل کرتے ہوئے تحقیقات مکمل ہونے تک فی الفور مستعفی ہوجائیں.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں