site
stats
پاکستان

ذاتی طور پرسمجھتا ہوں فوجی عدالتیں قائم ہونی چاہئیں ‘راجہ پرویز اشرف

لاہور: سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کا کہنا ہے کہ بڑے الزامات کے باوجود کسی کے خلاف کارروائی نہیں‌ ہوتی ہے، ملک کو فوجی عدالتوں کی اشد ضرورت ہے، جن پر کرپشن کے بڑے الزامات ہیں وہ کرسی پر بیٹھے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے لاہور کی نیب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی عدالتوں کا احترام کرتی ہے مگر ملک کے موجودہ حالات کے پیش نظر ذاتی طور پرسمجھتا ہوں فوجی عدالتیں قائم ہونی چاہئیں، اس وقت ملک کو فوجی عدالتوں کی اشد ضرورت ہے، خوفناک مسئلہ درپیش ہیں، جس سے پوری قوم نبرد آزما ہے۔

انہوں کہا کہ یہ ہمارے ملک کا سب سے بڑا المیہ ہے کہ بڑے الزامات کے باوجود کسی کے خلاف کچھ نہیں ہوتا ہے۔

فوجی آپریشن کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ پورے ملک میں یکساں آپریشن کیا جانا چاہیے اور دہشتگردوں اور سہولت کاروں کے خلاف آپریشن ہونا چاہیے۔

مزید پڑھیں:سندھ میں احتساب ہوسکتا ہے توپنجاب میں کیوں نہیں، راجہ پرویز اشرف

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگر سندھ میں احتساب ہوسکتا ہے تو پنجاب کو سینہ تان کر کہنا چاہئیے کہ آؤ ہمارا احتساب کرو، پیپلز پارٹی کے وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے بھی نیب کا سامنا کیا تھا لیکن ہم نے شور نہیں مچایا تھا تو اب نیب میں کسی بزنس مین کو دو گھنٹے بٹھانے پرحکومت کا شور مچانا درست نہیں۔

راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پیپکو میں غریب ترین افراد کو نوکریاں دینا جرم بن گیا، جن پر کرپشن کے بڑے الزامات ہیں وہ کرسی پر بیٹھے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top