The news is by your side.

Advertisement

ماہ رمضان کا آغاز ہوتے ہی مہنگائی کا جن بے قابو، پھلوں کی قیمتوں کو پر لگ گئے

کراچی : ماہ رمضان کا آغاز ہوتے ہی اشیائے خوردونوش کے ساتھ ساتھ پھلوں کی قیمتوں کو بھی پر لگ گئے ہیں۔ حکام سرکاری پرائس لسٹ پر عملدرآمد کرانے سے قاصر نظر آتے ہیں.

تفصیلات کے مطابق ماہ رمضان المبارک کا آغاز ہوتے ہی مہنگائی کا جن بے قابو ہوگیا ہے۔ ملک بھر کی طرح کراچی میں بھی اشیائے خوردونوش کے ساتھ ساتھ پھلوں کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرنے لگیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق 80 روپے درجن کے کیلے کی 150 روپے درجن میں فروخت ہورہے ہیں، 20 روپے کلو میں بکنے والا تربوز 30 روپے کلو جبکہ 80 روپے والا گرما 120 روپے کلو میں فروخت کیا جارہا ہے۔

اطلاعات کا کہنا ہے کہ 80 روپے کلو میں بکنے والے سیب کی قیمت 150 روپے فی کلو ہوگئی، اور پھلوں کا بادشاہ سمجھا جانے والا پھل آم 150 سے 180روپے کلو میں فروخت کیا جارہا ہے۔

حکام سرکاری پرائس لسٹ پر عملدرآمد کرانے سے قاصر نظر آتے ہیں نتیجتاً بے یار و مدد گارعوام مہنگائی کے بو جھ تلے دبتے ہی جا رہے ہیں۔

شہری میڈیا سے بات کرتے ہوئے یہ سوال کرتے نظر آئے کہ پرائس کنٹرول کے لئے مؤثر قانون کیوں نہیں ہے؟ آخر سندھ حکومت پرائس کو کنٹرول کرنے میں سنجیدہ کب ہوگی؟ قیمتیں کنٹرول کرنے کے لئے قانون سازی کب کی جائے گی؟


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں