The news is by your side.

Advertisement

رمضان پیکج : یوٹیلیٹی اسٹورز میں19اشیاء پر سبسڈی، تاجروں کے لیے اسکیم کا اعلان

اسلام آباد : وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا ہے کہ ماہ رمضان ریلیف پیکج کیلئے تیس ارب روپے سیل کا ٹارگٹ رکھا گیا ہے، انیس اشیاء پر سبسڈی اور تاجروں کے لیے جلد اسکیم لارہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر صنعت و پیداوار حماد اظہر نے رمضان ریلیف پیکج کا افتتاح کردیا، ان کا کہنا ہے کہ ماہ رمضان کیلئے تیس ارب روپے سیل کا ٹارگٹ رکھا گیا ہے۔

اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ یوٹیلیٹی اسٹورز کو50ارب روپے اضافی دیئے گئے، اس سال یوٹیلیٹی اسٹورزمیں19اشیاء پر سبسڈی دی گئی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پچھلے سال رمضان میں ساڑھے 3ارب کی سیل ہوئی تھی، اس سال 30ارب سیل کا ٹارگٹ رکھا، اسٹاک کا بندوبست بھی کیا ہے، پہلے 5چیزوں پر سبسڈی تھی اب 19پر ہے، دوسو موبائل یوٹیلیٹی اسٹورز بنائے ہیں، کھانے پینے کی اشیا کی ترسیل میں کوئی بندش نہیں آئی۔

حماد اظہر نے کہا کہ یوٹیلٹی اسٹورزسے رمضان میں80لاکھ سے1کروڑ گھرانے مستفید ہونگے، یوٹیلٹی اسٹورز پرروز مرہ کا سامان مناسب قیمتوں پر مل رہا ہے، پاکستان میں کھانے پینے کے سامان کی ترسیل جاری ہے، اس صورتحال میں روزمرہ کی اشیا پر کسی قسم کی پابندی نہیں لگائی گئی۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ حکومت چھوٹے اور درمیانے درجے کے تاجروں اور صنعت کیلئے اسکیم لارہی ہے، ذخیرہ اندوزوں کیخلاف سخت ایکشن کیلئے آرڈیننس جلد آجائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ملک میں اس وقت ایمرجنسی ہے کسی کو ذخیرہ اندوزی کی اجازت نہیں دیں گے، ذخیرہ اندوزوں کےخلاف قانون سازی کررہے ہیں،جس کے تحت کمپنی کا ملازم نہیں بلکہ مالک گرفتار ہوگا۔

وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ جی20ممالک کی جانب سے قرضوں کو ری شیڈیول کرناخوش آئند ہے، آئی ایم ایف کی جانب سے بھی1.3ارب ڈالر رعایتی پیکیج ملے گا جس سے معیشت کو بڑا سہارا ملے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں