The news is by your side.

Advertisement

جے آئی ٹی وزیراعظم نواز شریف کو نیچا دکھانا اور رعب دبدبہ قائم کرنا چاہتی ہے،رانا ثناءاللہ

لاہور: وزیر قانون پنجاب رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی وزیراعظم نواز شریف کو نیچا دکھانے میں مصروف اور رعب دبدبہ قائم کرنا چاہتی ہے، جس سے وہ متنازع ہو رہی ہے۔

پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر قانون رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نواز شریف انشااللہ پانامہ کے معاملے پر سرخرو ہوں گے، قوم سے کئے وعدے کے مطابق وہ ہر اس فورم پر پیش ہونے کیلئے تیار ہیں، جہاں جے آئی ٹی یا سپریم کورٹ بلائے گی۔

وزیر قانون رانا ثناءاللہ نے کہا کہ وزیر اعظم کی پیشی، جے آئی ٹی بننے یا بلانے پر کوئی اعتراض نہیں لیکن جے آئی ٹی وزیراعظم نواز شریف کو نیچا دکھانے میں مصروف اور رعب دبدبہ قائم کرنا چاہتی ہے، جس سے وہ متنازع ہو رہی ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ دھمکیوں کے باوجود گواہان کا مرضی کا بیان نہ دینا جے آئی ٹی کی سب سے بڑی مشکل ہے، سپریم کورٹ کا فیصلہ بھی نواز شریف کی مقبولیت کم نہیں کرسکتا۔


مزید پڑھیں : پانامہ کیس کی جے آئی ٹی متنازعہ بن چکی ہے، رانا ثناء اللہ


انہوں نے کہا کہ اگر جے آئی ٹی قطری شہزادے کو سوالات بھیجنے اور ویڈیو لنک کا آپشن دے سکتی ہے تو ایک منتخب وزیر اعظم کو جس کے کریڈٹ میں ملک کو ایٹمی ملک بنانا ہے، اسے آپشنز کیوں نہیں دیئے جا سکتے۔

رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ نواز شریف پاکستان کے پاپولر قومی لیڈر ہیں، سیاسی قوت کو کسی بھی فیصلے یا رپورٹ سے کوئی فرق نہیں پڑے گا، جے آئی ٹی کے فیصلہ سے نواز شریف کی شہرت میں پوائنٹ زیرو بھی فرق نہیں پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی شریف فیملی کے گواہان سے کہتی رہی وعدہ معاف گواہ بن جائیں، جاوید کیانی کو وعدہ معاف گواہ بننے کیلئے کہا گیا جبکہ نیشنل بینک کے سربراہ کو دھمکایا گیا۔ جے آئی ٹی بلائے گی تو وہ ضرور پی ہونگے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں