The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کی امریکی اور برطانوی اسٹیبلشمنٹ سے ملاقات کی تردید نہیں کروں گا، رانا ثناءاللہ

اسلام آباد : ن لیگی رہنما رانا ثنااللہ نے کہا ہے کہ نواز شریف کی امریکی اور برطانوی اسٹیبلشمنٹ سے ملاقات کی تردید نہیں کروں گا تاہم پارٹی پالیسی کے باعث اس پر گفتگو نہیں کرسکتا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، ایک صحافی نے ان سے سوال کیا کہ رواں ماہ4مارچ کو نواز شریف کی امریکی اور برطانوی اسٹیبلشمنٹ سے ہونے والی ملاقات پر کیا کہیں گے؟

جس پر رانا ثناءاللہ نے کہا کہ میں ان ملاقاتوں کی تردید نہیں کروں گا، میں اس پر تبصرے کی پوزیشن میں اس لیے نہیں ہوں کہ پارٹی کی طرف سے اجازت نہیں ہے۔

رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کا اسی ماہ مارچ کے مہینے میں وطن واپسی کا ارادہ ہے، نواز شریف کے دل کے آپریشن کے بعد وہ فوری طور پر وطن واپس آجائیں گے۔

حکومت میں شمولیت سے متعلق ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن نے کسی بھی قومی حکومت کا حصہ نہ بننے کا فیصلہ کیا ہے، مسلم لیگ ن قومی حکومت کی بجائے مڈ ٹرم انتخابات کا انعقاد چاہتی ہے۔

رانا ثناءاللہ کا مزید کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن اپنا احتجاج ریکارڈ کرانے کے لیے ہر فورم کا انتخاب کرے گی، نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کے لیے قانونی ٹیم کی مشاورت جاری ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں