site
stats
پاکستان

جے آئی ٹی کا متنازع ہونا ملک کے مفاد میں نہیں‌، رانا ثناءاللہ

لاہور : صوبائی وزیرِ قانون رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ جو کچھ سامنے آ یا ہے اس مدنظر رکھتے ہوئے کیسے سمجھیں کہ جے آئی ٹی غیر جانبدار ہے اور جےآئی ٹی رپورٹ متنازع ہوئی توصورت حال ملک وقوم کے لیے بہترنہیں ہوگی۔

لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 2018 کے الیکشن کے لیےعوام فساد کی سیاست مسترد کردیں گے حسین نواز نے تصویر سے متعلق درخواست دائرکردی ہے کیوں کہ تصویرکے بارے میں حسین نواز آگاہی چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جےآئی ٹی ممبران کوسپریم کورٹ کے ججزکا استحقاق حاصل نہیں ہے جب کہ جن دوارکان پرجواعتراض اٹھائے گئے تھے ان کا جواب بھی نہیں دیا گیا حالانکہ تفتیشی ٹیم کو آئینی تحفظ حاصل نہیں اور اُن پراعتراض ہوسکتا ہے۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ایسی صورت حال میں کوئی کس طرح کہہ سکتا ہے کہ جےآئی ٹی کی تحقیقات غیرجانبدار ہے اگر رپورٹ متنازع ہوئی تو صورت حال ملک وقوم کے لیے بہترنہیں ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ جےآئی ٹی کے بائیکاٹ کا اختیار اورفیصلہ شریف خاندان کے پاس ہے اور ہم حسین نوازکےسپریم کورٹ میں مؤقف کی حمایت کرتےہیں کیوں کہ گواہوں پر زبردستی کے بیان کا نوٹس لیا جانا چاہیے، گواہان بھی کہہ رہے ہیں ان سے 13،13 گھنٹے تحقیقات ہورہی ہیں اور سب جانتے ہیں کہ 13گھنٹےکی انکوائری میں کچھ بھی کہلوایاجاسکتا ہے۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ جوبھی درخواست کر رہے ہیں وہ سپریم کورٹ سے کررہے ہیں اس لیے سپریم کورٹ سے درخواست ہے واٹس ایپ کے معاملے کی تحقیقات ہونی چاہئیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top