شوکت بسرا پر فائرنگ چائے کی کمپنیوں پر جھگڑے کا شاخسانہ ہے، رانا ثناء اللہ
The news is by your side.

Advertisement

شوکت بسرا پر فائرنگ چائے کی کمپنیوں پر جھگڑے کا شاخسانہ ہے، رانا ثناء اللہ

لاہور : صوبائی وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ شوکت بسرا پر فائرنگ کا واقعہ دو چائے کی کمپنیوں کے جھگڑے کی وجہ سے پیش آیا جس کی مکمل تحقیقات کرکے اصل مجرمان کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔

یہ بات انہوں نے پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی انہوں نے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ رکن اسمبلی شوکت بسرا جس کے خلاف چاہیں گے اسی کے خلاف مقدمہ درج ہوگا اور شفاف تحقیقات کی یقین دہانی کراتا ہوں۔

رانا ثناء اللہ نے فائرنگ کے واقعے کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے شوکت بسرا نے چائے کی ایک فیکٹری کے باہر احتجاجی کیمپ لگایا اور نعرے بازی کی جہاں فیکٹری گارڈ سے اُن کا جھگڑا اور تلخ کلامی کے بعد نوبت یہاں تک پہنچی۔

رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ شوکت بسرا کے معاملے پر پیپلز پارٹی کے رہنماؤں قمر زمان کائرہ اور ندیم افضل چن کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ آئیں اور خود معاملے کو دیکھیں اور حقائق کا جائزہ لے کر فیصلہ کریں جو ہمیں منظور ہو گا تاہم بناء کچھ جانے الزام تراشی سے گریز کریں۔

اُنہوں نے پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ چائے کی کمپنیوں کے جھگڑے کو سیاسی معاملہ نہ بنایا جائے ، چائے کی کمپنیاں نا تو بلاول بھٹو کے خلاف مہم چلا رہیں تھیں اور نہ ہی پیپلزپارٹی کے خلاف کسی سازش میں ملوث ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں