The news is by your side.

Advertisement

عمران خان کی سیاست ریحام خان کے ایک انٹرویو کی مار ہے، ثناء اللہ

لاہور: وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم کے سماجی بائیکاٹ کی بات ہندوستان یا اسرائیل تو کر سکتا ہے، اگر کوئی پاکستان میں بیٹھ کر کرے تو اس کے ذہنی علاج کی ضرورت ہے۔ عمران خان کی سیاست ریحام خان کے ایک انٹرویو کی مار ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے کہا کہ عمران خان اپنی جماعت کے چار سال ضائع کر چکے ہیں، وزیراعظم کے سماجی بائیکاٹ کی بات کرنے پر ان کا ذہنی معائنہ کروانا چاہیئے۔ اب وہ کچھ اور نہیں کر سکتے تو ایک اور شادی ہی کر لیں۔

وزیر قانون نے کہا کہ عمران خان قرآن پر حلف دیں کہ ان کی کتنی بیویاں اور بچے ہیں، وہ انہیں سچا مان لیں گے، ورنہ عمران خان کی سیاست ریحام خان کے ایک انٹرویو کی مار ہو گی۔

رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ لاہور ہائیکورٹ بار نے نہیں، حامد خان گروپ نے کیا ہے، ریاض پیرزادہ پارٹی کے ساتھ ہیں، نواز شریف 31 مئی 2018 تک وزیراعظم ہیں۔


مزید پڑھیں : عمران خان کو 10ارب توکیا 10روپے بھی نہیں دیےجاسکتے، راناثنااللہ


گزشتہ روز وزیرقانون راناثنااللہ کا کہنا تھا کہ ہرعزت دار کی عزت اچھالنا عمران خان اپنا فرض سمجھتے ہیں، عمران خان کو10ارب توکیا10روپے بھی نہیں دیے جاسکتے، یہ لوگ اداروں کو دباؤ میں لانے کےلیے ہتھکنڈے استعمال کیے جارہے ہیں۔

وزیرقانون پنجاب کا کہنا تھا کہ یہ لوگ منفی سیاست کو آگے بڑھانا چاہتے ہیں، اورنج لائن وقت کی ضرورت ہے۔

وزیرقانون پنجاب کا کہنا تھا کہ ریاض پیرزادہ کو کوئی شکایت تھی تووزیراعظم سے بات کرتے، یہ کوئی طریقہ نہیں کہ بیان بازی شروع کردی جائے۔

سجن جندال کے متعلق راناثنااللہ کاکہناتھاکہ وزیراعظم میاں محمد نوازشریف سے بھارتی اسٹیل ٹائیکون کی ملاقات ذاتی نوعیت کی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں