The news is by your side.

رانا ثنا اللہ نے اپنی گاڑی پر جوتا پھینکے جانے پر ردعمل دے دیا

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے لاہور میں گاڑی پر جوتا پھینکنے جانے کے واقعے پر اپنے ردعمل کا اظہار کر دیا۔

رانا ثنا اللہ نے اپنے بیان میں بتایا کہ میری گاڑی پر جوتا پھینکے جانے کا مجھے علم نہیں، مجھے تو بعد میں بتایا گیا کہ تحریک انصاف کے ممبر پنجاب اسمبلی کے ڈرائیور نے جوتا پھینکا ہے، موقع پر جو لوگ تھے انہوں نے جوتا پھینکنے والے شخص کی مرمت کی۔

انہوں نے کہا کہ جوتا پھینکنے والے شخص کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کروں گا، وزیر داخلہ کے ساتھ مسلم لیگ (ن) پنجاب کا صدر بھی ہوں اور پارلیمانی پارٹی کے معاملات دیکھنا بھی ذمہ داری ہے۔

متعلقہ: رانا ثنا اللہ کی گاڑی پر جوتا پھینک دیا گیا

تحریک عدم اعتماد پر وزیر داخلہ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی کے پاس ممبران نہیں اور انہیں ہر صورت اعتماد کا ووٹ لینا پڑے گا، عدالت کے اسٹے پر انہوں نے 12 دنوں میں اربوں کی لوٹ مار کی، اگر اعتماد کا ووٹ نہیں لیتے تو نئے چیف منسٹر کا الیکشن ہوگا۔

رانا ثنا اللہ نے کہا کہ ایم کیوایم اور پیپلز پارٹی کے درمیان ایک ایشو ہے، کوشش کر رہے ہیں کہ دونوں کے درمیان معاملہ بہتر انداز میں حل ہو جائے۔

عمران خان کی نااہلی سے متعلق انہوں نے بتایا کہ سابق وزیر اعظم کے نااہل ہونے کے امکانات 99 فیصد ہیں، ان کی گرفتاری کی ضرورت نہیں، عدالت میں عمران خان کے خلاف کیسز ثابت ہو چکے، انہیں وہاں سے سزا ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں