The news is by your side.

Advertisement

رینجرزکے اختیارات مں توسیع، پس پردہ کیا حقائق ہیں

کراچی : حکومت سندھ نےتاحال رینجرزکے اختیارات مں توسیع نہیں کی۔سندھ حکومت نے اخراجات کی عدم ادائیگی کو وجہ تنا زعہ قرار دیاہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ معاملہ رقم کی ادائیگی کانہیں بلکہ اصل وجہ کرپشن کے خلاف کاروائیاں ہیں۔ کراچی میں رینجرزکو پولیس کےاختیارات دینےکافیصلہ جنوری دوہزار گیارہ میں ہوا۔انسداددہشت گردی ایکٹ دفعہ پانچ کےتحت رینجرزکوتلاشی اورملزمان کی گرفتار ی کیلئےچھاپوں کےخصوصی اختیارا ت ملے۔

ستمبردوہزارتیرہ میں کراچی آپریشن کیلئےرینجرزکومزیداختیارات دیئے گئے۔نئی ترمیم کےبعدرینجرزملزمان کونوےدن تک حراست میں بھی رکھ سکتی ہے۔

نیشنل ایکشن پلان کےتحت کراچی میں شروع ہونےوالےرینجرز آپریشن کےبعدشہر قائد میں امن وامان کافی حدتک بہترہواہے رینجرزکےاختیارات کاتنازع رواں برس شدت اختیارکرگیا۔

ٹارگٹڈ آپریشن کےدوران رینجرزنےکرپشن کیخلاف کاروائیاں کیں توایوانوں میں ہل چل مچ گئی۔ آپریشن کے کپتان نے کرپشن کیخلاف ایکشن کوحکومت سندھ نےپرحملہ قرار دیا اوروفاقی حکومت سے شکایت کی، رینجرزکےاختیارات میں توسیع کےمعاملےنےجولائی میں سراٹھایا۔

سائیں سرکارنےایک ماہ کیلئےنوٹیفیکیشن جاری کیا۔ وفاقی حکومت کےدباؤ پراگست میں رینجرزکوچارماہ کیلئےتوسیع دی گئی۔اب ایک بار پھر رینجرزکو خصوصی اختیارات میں توسیع دینےکامعاملہ الجھ گیا۔

وفاقی وزیر داخلہ نےتو توسیع نہ ہونےکی صورت میں فورس کو واپس بلانےکاعندیہ دےڈالا، تجزیہ نگاروں کاکہناہےکہ پس چلمن کچھ اورمعاملات بھی ہیں، آپریشن کےکھلا ڑیوں نےکپتان کو بتا ئےبغیر بعض تیز رفتار گیندیں کر ائیں جنہیں کپتان وزیر اعلیٰ نو بال سمجھتے ہیں اب دیکھنا یہ ہے کہ معاملا ت کیا رخ اختیار کر تے ہیں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں