کراچی میں رینجرز کی موبائل پر فائرنگ، چاراہلکار شہید -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں رینجرز کی موبائل پر فائرنگ، چاراہلکار شہید

کراچی : اتحاد ٹاؤن میں دہشت گردوں کی رینجرز کی موبائل پر فائرنگ سے چاراہلکار شہید ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق بلدیہ کے علاقے اتحاد ٹاؤن میں نامعلوم مسلح افراد نے مسجد کے باہر کھڑی رینجرز کی موبائل پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔

فائرنگ کے نتیجے میں موبائل میں موجود چار اہلکار شدید زخمی ہوگئے، جنہیں تشویشناک حالت میں قریبی اسپتال پہنچایا گیا، جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے خالق حقیقی سے جا ملے۔

مذکورہ اہلکار مسجد ابو ہویرہ کے باہر نماز جمعہ کی ڈیوٹی پر موجود تھے کہ اچانک موٹر سائیکل پر سوار مسلح افراد نے ان پر حملہ کردیا۔

ملزمان واردات کے بعد باآسانی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے، واقعے کے بعد پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں نے جائے وقوعہ کو گھیرے میں لے لیا۔

رینجرز اہلکاروں نے دہشت گردوں کی فائرنگ کے بعد بلدیہ اتحاد ٹاﺅن میں سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے ۔شواہد اکھٹے کئے جارہے ہیں، میڈیا سمیت کسی کو بھی جائے وقوعہ پر جانے کی اجازت نہیں

دریں اثناء ڈی جی رینجرز میجر جنرل بلال اکبر کے مطابق حملہ آوروں کی تعداد دو یا تین تھی۔انہوں نے کہا کہ دہشت گرد جلد پکڑے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حملہ آوروں اور ان کے منصوبہ ساز بہت جلد قانون کی گرفت میں ہوں گے۔

علاوہ ازیں وزیراعظم نواز شریف نےرینجرز اہلکاروں پر فائرنگ کے واقعے کی مذمت کرتے ہوئےواقعے کو سفاکانہ دہشت گردی قراردیاہے۔

وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ نے رینجرز اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ڈی جی رینجرز سے فون پر رابطہ کیا قائم علی شاہ نے آئی جی سندھ کو واقعے میں ملوّث دہشتگردوں کی فوری گرفتاری کے حکم بھی دیا۔

دوسری جانب متحدہ قومی موومنٹ نے رینجرز اہلکاروں ہر قاتلانہ حملہ کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے دہشت گردوں کو گرفتار کرکے عبرتناک سزا دہنے کا مطالبہ کیا ہے۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں