The news is by your side.

Advertisement

موٹر سائیکل رکشے میں ذہنی معذور پر ظالموں نے ستم ڈھا دیا

لاہور: موٹر سائیکل رکشے میں ڈرائیور سمیت 3 افراد نے ایک ذہنی معذور نوجوان سے زیادتی کی، پولیس نے متاثرہ نوجوان کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں درندوں نے ایک ذہنی معذور نوجوان کو بھی نہیں چھوڑا، یتیم خانے سے ٹاؤن شپ جانے والے نوجوان کو موٹر سائیکل رکشے کے ڈرائیور نے دو دیگر افراد کے ساتھ مل کر زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔

پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر لیا، تفتیشی افسر کا کہنا ہے کہ میڈیکل رپورٹ میں نوجوان سے اجتماعی زیادتی ثابت ہو گئی ہے۔

تاہم اس واقعے کو کئی دن گزر جانے کے بعد بھی پولیس ملزمان کو گرفتار نہیں کر سکی ہے، نوجوان کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ متاثرہ نوجوان ذہنی معذور اور اسٹور پر نوکری کرتا ہے۔

ایف آئی آر میں لکھوایا گیا کہ نوجوان یتیم خانے سے ٹاؤن شپ جانے کے لیے رکشے میں بیٹھا تھا، ملزمان نے رکشہ کھیتوں میں لے جا کر نوجوان سے زیادتی کی۔

یاد رہے کہ فروری 2020 میں لاہور کے علاقے گلشن راوی میں چند دوستوں نے مل کر سفاکانہ مذاق کرتے ہوئے ایک 28 سالہ ذہنی معذور نواجون کے جسم میں ہوا بھر دی تھی، جس کی وجہ سے عثمان کی انتڑیاں پھٹ گئیں اور اسے تشویش ناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا، پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے تین ملزمان کو گرفتار کر لیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں