پاکپتن: 6 سالہ بچی کے ساتھ مبینہ زیادتی، ورثا کا پولیس سے کارروائی کا مطالبہ
The news is by your side.

Advertisement

پاکپتن: 6 سالہ بچی کے ساتھ مبینہ زیادتی، ورثا کا پولیس سے کارروائی کا مطالبہ

پاکپتن: پنجاب کے ضلع پاکپتن میں 6 سالہ معصوم بچی کے ساتھ مبینہ زیادتی کی گئی، ورثا نے پولیس سے ملزم کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ضلع پاکپتن کے علاقے کرمانوالہ چوک کی رہائشی 6 سالہ ننھی کلی کو جنسی درندے نے اپنی ہوس کا نشانہ بنایا۔

اس انسانیت سوز واقعے پر ورثا کی جانب سے شدید غم غصہ پایا جاتا ہے، جبکہ میڈیکل لیگل ٹیم نے بچی سے زیادتی کی تصدیق بھی کردی۔

مردان میں 4 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل

ورثا کا کہنا ہے کہ ملزم نے بچی کو ورغلا کر زیادتی کا نشانہ بنایا، زیادتی کے بعد ملزم نے بچی کو نشہ آور جوس پلایا، جبکہ پولیس ملزم کے خلاف کاروائی نہیں کر رہی۔

خیال رہے کہ رواں سال جنوری میں خیبر پختونخواہ کے شہر مردان میں کمسن بچی سے زیادتی کا ایک اور ہولناک واقعہ پیش آیا تھا، گوجر گڑھی کے علاقے جندر پار میں 4 سالہ بچی عاصمہ کو مبینہ طور پر زیادتی کے بعد قتل کر کے لاش کھیتوں میں پھینک دی گئی تھی۔

یاد رہے کہ جون 2015 میں شیخوپورہ کے نواحی علاقے مانانوالہ میں پینتالیس سالہ شخص شاہد عرف شادو نے مبینہ طورپرسات سالہ معصوم بچی کو اپنی ہوس کا نشانہ بناڈالا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں