The news is by your side.

Advertisement

امریکی طوفانوں کے دوران چڑیا گھروں سے نایاب جانور چوری ہوگئے

امریکی ریاستوں کو بدترین تباہی سے دو چار کرنے والے یکے بعد دیگرے 4 طوفانوں نے ایک طرف تو لاکھوں لوگوں کی زندگیوں کو متاثر کیا، تو دوسری طرف بدنیت افراد اور چور اچکوں کی بھی چاندی ہوگئی جو ایسے موقع پر بھی ہاتھ دکھانے سے باز نہ آئے۔

ایسا ہی کچھ کیریبیئن جزائر کے سنیٹ مارٹن جزیرے میں ہوا جہاں ایک چڑیا گھر سے نایاب اور قیمتی جانوروں کو چرا لیا گیا۔

چڑیا گھر انتظامیہ کے مطابق طوفان کے دوران ہنگامی حالات سے نمٹنے کے بعد انہیں علم ہوا کہ چڑیا گھر سے نہایت نایاب نسل کے جانوروں کے 6 جوڑے غائب ہیں۔

انتظامیہ کے مطابق وہاں موجود جانوروں نے طوفان کے دوران بھاگنے سے گریز کیا اور اپنی جگہ ڈٹے رہے جنہیں بعد ازاں محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا۔ ان جانوروں کی تعداد 300 کے قریب بتائی جارہی ہے۔

مزید پڑھیں: مشرق سے مغرب تک تباہ کن سیلاب اور طوفان

ان کا کہنا تھا کہ طوفان کے دوران کچھ جانوروں کی ہلاکت بھی ہوئی جن میں ایک بڑی چھپکلی بھی شامل تھی۔ اس جانور کی موت طوفان کے دوران صدمے سے واقع ہوئی۔

طوفان کے دوران 225 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی ہواؤں نے بند پنجروں کو توڑ دیا جس کے بعد تمام خطرناک جانور بھی پنجروں سے نکل آئے اور ایک مگر مچھ نے ایک نایاب نسل کے خرگوش اور ٹوکان نامی نایاب پرندے کا شکار بھی کرلیا۔

ان کے علاوہ بھی کئی جانور تاحال لاپتہ ہیں۔ بعض جانور ادھر ادھر گھومتے ہوئے بھی پائے گئے جس کے بعد مقامی افراد نے انہیں پکڑ کر ان کے لیے مخصوص کی گئی جگہوں تک پہنچایا۔

مقامی افراد اس چڑیا گھر کی تباہ حالی سے نہایت افسردہ نظر آئے۔ یہ سینٹ مارٹن جزیرے کا واحد چڑیا گھر تھا اور مقامی افراد اور ان کے بچوں کے لیے تفریح کا بہترین اور واحد ذریعہ بھی تھا۔

چڑیا گھر انتظامیہ کا کہنا ہے کہ تمام تر کوششوں کے باوجود چڑیا گھر کو دوبارہ اصل حالت میں واپس لانا اب ناممکن ہے۔

واضح رہے کیریبیئن جزائر بحر اوقیانوس میں آنے والے طوفانوں سے شدید متاثر ہوئے ہیں اور ان میں سے سینٹ مارٹن جزیرے کا 95 فیصد انفرا اسٹرکچر تباہ ہوچکا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں