The news is by your side.

خام مال اور میڈیکل ڈیوائسز کی درآمد تعطل کا شکار، اسپتالوں میں صحت کی سروس رکنے کا اندیشہ

کراچی: ادویات کے را مٹیریل اور میڈیکل ڈیوائسز کی پاکستان میں درآمد بند ہونے سے اسپتالوں میں صحت کی سروس رکنے کا اندیشہ پیدا ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں طبی سہولت کی فراہمی اور جان بچانے والی میڈیکل اور سرجری کے آلات اور مشینری کی امپورٹ کا عمل رکا ہوا ہے۔

ہیلتھ کیئر ڈیوائس ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں استعمال ہونے والی 90 فیصد میڈیکل ڈیوائس امپورٹ کی جاتی ہے، امپورٹ کا عمل رکنے کے باعث اسپتالوں میں صحت کی سروس رکنے کا اندیشہ پیدا ہوگیا ہے۔

ہیلتھ کیئر ڈیوائس ایسوسی ایشن نے بتایا کہ ڈریپ نے طبی آلات کی رجسٹریشن لازمی قرار دیا تھا، امپورٹ پالیسی کو ڈریپ سرٹیفکیٹ سے مشروط کر دیا گیا تھا۔

 ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ رجسٹریشن کی بیشتر درخواستوں پر ڈریپ کوئی فیصلہ نہ کرسکا جس کے باعث امپورٹ رکی ہوئی ہے، اس لیے ہیلتھ کیئر ڈیوائس ایسوسی ایشن بغیر میڈیکل ڈیوائس کے اسپتال صحت کی سہولت فراہم نہیں کرسکتا ہے۔

ہیلتھ کیئرڈیوائس ایسوسی ایشن کا مزید کہنا تھا کہ ڈریپ وفاقی محکمہ صحت سمیت دیگر اعلیٰ حکام اس معاملے سے آگاہ ہیں، اگر صورتحال کو کنٹرول نہ کیا گیا تو سنگین بحران کا سامنا کرنا پڑے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں