پیپلزپارٹی اسٹیل مل اور پی آئی اے کی نجکاری کی مخالفت کرے گی: رضا ربانی Raza Rabbani
The news is by your side.

Advertisement

پیپلزپارٹی اسٹیل مل اور پی آئی اے کی نجکاری کی مخالفت کرے گی: رضا ربانی

کراچی: سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے کہا ہے کہ ریاست پاکستان آئی ایم ایف کی دُھن پر رقص کررہی ہے، آئی ایم ایف کو پاکستان کو ڈکٹیٹ کرنے کا کوئی حق نہیں.

تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف رپورٹ میں پی آئی اے اور اسٹیل ملز کے خسارے میں‌ جانے کا ذکر ہے. یہ رپورٹ اشارہ ہے کہ نجکاری کی جائے اور بجلی کے نرخ بڑھائے جائیں.

بیرونی قرضے ریکارڈ سطح‌ پر پہنچ چکے ہیں، اگر کوئی بیرونی معاہدے ہورہے تو انھیں پارلیمان میں‌ لایا جائے، عوام کومعلوم ہونا چاہیے کہ معاہدوں کے مندرجات کیا ہیں

رضا ربانی سابق چیئرمین سینیٹ

انھوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی اسٹیل مل اور پی آئی اے کی نجکاری کی مخالفت کرے گی، پیپلزپارٹی نے ہمیشہ محنت کشوں اورمزدورں کے حقوق کی بات کی، نجکاری نیک نیتی کے تحت نہیں، یہ مزدور کش اقدامات ہیں، ای اوبی آئی 18 ویں ترمیم کے تحت صوبوں کو دی جانی چاہیے.

انھوں نے کہا کہ حکومت کے جانے میں فقط تین چار ماہ رہ گئے ہیں، مگر پی آئی اے کی نجکاری کے لئے کام شروع ہوگیا ہے. دانیال عزیزنے کہا تھا کہ پیسے کوئی بھی لے آئے، ہم اُسے پی آئی اے دے دیں گے.

اُنھوں نے مفتاح اسماعیل کے بیان کا حوالہ دیا، جنھوں نے کہا تھا کہ ایک ادارہ خرید لو، دوسرا مفت لے لو. رضا ربانی کا کہنا تھا کہ پی آئی اے اس ملک کی ایئرلائن ہے، حکومتی بیانات میں تضاد ہے، کیا یہ حکومت کے پرائیوٹ ادارے ہیں؟ یہ سب عوام کے ادارے ہیں.


ہم نے جمہوریت کے لیے رضا ربانی کی حمایت کی تھی: مشاہد اللہ خان


رضا ربانی کا کہنا تھا کہ منافع والے روٹس کو جان بوجھ کر بند کر دیا گیا، منصوبے کے تحت پی آئی اے کی نجکاری کا منصوبہ ہے، ایک سال کا وقت نئی مینجمنٹ کودیا جائے، وہ اسے واپس ٹریک پرلائے.

انھوں نے کہا کہ بیرونی قرضے ریکارڈ سطح‌ پر پہنچ چکے ہیں، اگر کوئی بیرونی معاہدے ہورہے تو انھیں پارلیمان میں‌ لایا جائے، عوام کومعلوم ہونا چاہیے کہ معاہدوں کے مندرجات کیا ہیں، طلبا اور تاجر یونین پر سوچ سمجھ کرپابندی لگائی جائے.


ایوان کی بالادستی کو قید نہیں کیا جاسکتا، رضا ربانی


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں