site
stats
پاکستان

ٹرمپ انتظامیہ سے مل کر کام کے لیے تیار ہیں، اسحاق ڈار

واشنگٹن: وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ  پاک امریکا کے تعلقات کے لیے پرامید اور ٹرمپ انتظامیہ کے ساتھ مل کر کر کام کرنے کے لیے تیار ہیں، پاکستان کے جوہری ہتھیار مکمل محفوظ ہیں۔

واشنگٹن میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ کسی بھی جاسوس یا غدار کو سفارتی رسائی نہیں دی جاتی، کلبھوشن کو دہشت گردی کی سزا ملی۔

انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کال حل خطے میں امن و استحکام کے لیے انتہائی ضروری ہے، امید ہے ٹرمپ انتظامیہ مسئلہ کشمیر کے معاملے میں ثالثی کا کردار ادا کرے گی، امریکی اخبار میں پاکستان کے جوہری ہتھیاروں سے متعلق بے بنیاد اور گمراہ کن آرٹیکل شائع کیا گیا، حقیقت یہ ہے پاکستان کے جوہری ہتھیار مکمل محفوظ ہیں۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ پاک امریکا تعلقات کئی دہائیوں پر مشتمل ہیں، ہم امریکا کے ساتھ دفاع، معیشت سمیت مختلف شعبوں میں کام کرنے کے خواہش مند ہیں مگر کچھ عرصے سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات ٹھہراؤ کا شکار ہیں، ہمیں آگے بڑھنے کے لیے معمولی نوعیت کے اختلافات کو حل کر کے آگے بڑھنا چاہیے۔

وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ پاکستان کے معاشی حالات میں مسلسل بہتری آرہی ہے، موجودہ حکومت معاشی ترقی، توانائی بحران تعلیم کے فروغ اور دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پرامید ہے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ فاٹا آپریشن کی وجہ سے 13 لاکھ افراد نے نقل مکانی کی  تاہم حالات بہتر ہونے کے بعد 75 فیصد لوگ واپس اپنے گھروں کو جاچکے ہیں جبکہ پاکستان پہلے ہی 30 لاکھ سے زائد افغان مہاجرین کا بوجھ برداشت کررہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top