The news is by your side.

Advertisement

ترک صدر نے ہنگامی حالت میں توسیع اور فوری انتخابات کا حکم دے دیا

انقرہ: ترکی میں جاری ہنگامی حالت میں ایک بار پھر تین ماہ کی توسیع کی کوششیں کی جارہی ہیں دوسری جانب ترکی کے صدر نے پارلیمنٹ کو فوری انتخابات کرانے کی ہدایت بھی کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترک ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ ترک صدر رجب طیب اردگان کی جانب سے پارلیمنٹ کو یہ ساتویں بار ہنگامی حالت میں توسیع کی تجویز دی گئی ہے۔

خطے میں جاری سیاسی حالات بالخصوص شام کی جنگ کے تناظر میں طیب اردگان نے پارلیمنٹ سے کہا ہے کہ وہ 24 جون کو فوری صدارتی و پارلیمانی انتخابات منعقد کرے، واضح رہے کہ یہ انتخابات نومبر 2019 میں شیڈول تھے۔

فرانس کی ترکی اور کرد جنگجوؤں کے درمیان ثالثی کی پیشکش

صدارتی محل میں ایک تقریر میں ترک صدر کا کہنا تھا کہ ملک کو فوری طور پر انتظامی صدارتی نظام پر منتقلی کی ضرورت ہے۔ اس سے قبل ان کی جانب سے پارلیمنٹ کو ہنگامی حالت میں توسیع کے لیے درخواست بھیجی گئی تھی جس پر آج رائے شماری ہونی تھی۔

خیال رہے کہ ترکی میں 2016 کے موسم گرما میں حکومت کا تختہ الٹنے کی ناکام کوشش کے بعد ہنگامی حالت نافذ کی گئی تھی۔ ترکی آئین کے مطابق ہنگامی صورتِ حال زیادہ سے زیادہ چھ ماہ تک جاری رہ سکتی ہے تاہم چھ ماہ کے بعد اس میں بار بار توسیع ممکن ہے۔ اب تک ترکی میں اندازاً پچاس ہزار افراد کو قید کیا گیا ہے، جب کہ ہزاروں کو ملازمتوں سے برطرف کر دیا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں