site
stats
پاکستان

دوہری شہریت ہے،سیاست میں نہیں آسکتی، ریحام خان

لندن : عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کا کہنا ہے کہ وہ اور عمران خان ایک دوسرے کو سمجھ نہیں پائے، طلاق یافتہ افراد مجرم نہیں ہوتے، طلاق یافتہ خاتون کونشانہ بنانا آسان ہوتا ہے.

ریحام خان عمران خان سے علیحدگی کے بعد میڈیا کو تنقید کا نشانہ تو بنا رہی ہیں لیکن اپنے خیالات کے اظہار کے لئے میڈیا کا ہی استعمال بھی کررہی ہیں۔

برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کا کہنا تھا کہ وہ دوہری شہریت کی حامل ہیں اور اگر ایسانہ بھی ہوتا تب بھی سیاست میں نہ آتیں.

عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان کا کہنا ہے کہ انہوں نے تحریک انصاف کے نظریے کے بارے میں کوئی خاص نہیں پڑھا اور ان کاسیاست میں آنے کا پہلے کوئی ارادہ تھا اور نہ ہی اب ہے۔

عمران خان کی سیاست میں حمایت سے متعلق انکا کہنا تھا کہ انہوں نے ایسا اس لیے کیا کیونکہ عمران خان انکےخاندان کا حصہ تھے، شادی میں ناکامی سے متعلق ریحام خان کا کہنا تھا کہ وہ اور عمران خان ایک دوسرے کو سمجھ نہیں پائے، سیاست میں آنے سےروکنے پرطلاق لینےسےمتعلق سوال پران کہنا تھاکہ کوئی بھی پاکستانی عورت ایسا سوچ بھی نہیں سکتی کہ وہ ایسی کسی بات پر طلاق کا فیصلہ کرلے.

ریحام خان نے اپنے سابقہ ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان سے شادی کے بعد اور دس ماہ کے دوران مجھ پر میرے بچوں پر الزامات لگتے رہے لیکن ہم خاموش رہے، الفاظ کی جنگ مشکلات کھڑی کرسکتی تھی، سوشل میڈیا پربھی الزامات لگائے گئے.

ریحام نے یہ بھی کہا کہ کچھ لوگوں نے عمران خان کو زہر دینے کا بھی موردالزام ٹھہرایا گیا، طلاق یافتہ افراد مجرم نہیں ہوتے، طلاق یافتہ خاتون کونشانہ بنایا گیا، میڈیا پر بغیر تحقیق کے الزامات لگائے.

انکا مزید کہنا تھا کہ وہ پاکستان میں خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے کام کرنا چاہتی ہیں۔

دوسری جانب ایک ٹوئیٹ میں ریحام خان کا کہنا ہے کہ وہ واضح کرناچاہتی ہیں کہ اُنہوں نے کسی چیز کا مطالبہ نہیں کیا اور نہ ہی کسی قسم کا حق مہر وصول کیا.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top