The news is by your side.

Advertisement

بیرون ملک سے آنے والے پاکستانیوں کیلئے کرونا ٹیسٹ میں نرمی

کراچی : سول ایوی ایشن اتھارٹی نےعارضی طورپربیرون ملک سے آنے والے پاکستانیوں کیلئے ہیلتھ کرونا ٹیسٹ میں نرمی کردی ، شرط کی نرمی کااختتامی وقت21 مارچ کی رات8بجےتک مقررکیاگیاہے۔

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی نےعارضی طورپربیرون ملک سے آنے والےپاکستانیوں کو ہیلتھ کورونا ٹیسٹ سےاستشنیٰ دیتے ہوئے نوٹم جاری کردیا، جس کااطلاق اکیس مارچ سے ہوگا۔

وزارت ہوابازی کے ترجمان کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹم کا مقصد براہ راست پروازوں کے ذریعے پاکستان آنے والے مسافروں کو سہولت فراہم کرنا ہے۔

براہ راست پروازوں کے ذریعے آنے والے مسافروں کے لیے کرونا وائرس کی مصدقہ رپورٹ کی فراہمی کے بغیر پاکستانی حدود میں داخل ہونے کی شرط کچھ دورانیےکیلئےختم کی گئی ، شرط کی نرمی کااختتامی وقت 21 مارچ کی صبح 5 بجے سے بڑھا کر 21 مارچ کی ہی رات 8 بجے تک مقرر کر دیا گیا ہے۔

21 مارچ کے بعد بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کے لیے کرونا وائرس کی مصدقہ ٹیسٹ رپورٹ فراہم کرنا لازم ہو گا، اس نوٹم کا اطلاق صرف ان پروازوں پر ہو گا، جو 21 مارچ 2020 صبح 5 بجے پرواز کی حالت میں ہوں گی۔

ذرائع کےمطابق پی آئی اے کے سی ای او ایئر مارشل ارشد ملک نے سیکریٹری ایوی ایشن سے رابطہ کرکے کہا تھا کہ بیرون ملک سے آنے والے پاکستانیوں کو ہیلتھ ٹیسٹ سے استثنیٰ دیا جائے، برطانیہ اور یورپ سےپاکستان آنے والے مسافروں کو مشکلات کا سامناہے۔

کرونا وائرس ٹیسٹ کی شرط میں نرمی کے لئے اسپیشل کوارڈینیشن کمیٹی نے سفارش وزیراعظم کو بھجوائی تھی ، یہ فیصلہ بیرون ملک مقیم پاکستانی طلبا اور سیاحوں کی وطن واپسی میں مشکلات کے پیش نظرکیا گیا جبکہ آئندہ مشتبہ مسافروں کو ایئرپورٹ سے قرنطینہ منتقل کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق ملک کے 7 بڑے شہروں میں بڑے ہوٹل حاصل کر کے قرنطینہ میں تبدیل کیے جائیں گے، ہوٹلوں میں اٹیچ باتھ والے کمروں میں صرف مشتبہ مریضوں کو رکھا جائے گا۔ کراچی، لاہور، اسلام آباد،پشاور، فیصل آباد، ملتان، سیالکوٹ میں قرنطینہ قائم کیے جائیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں