The news is by your side.

Advertisement

عمران خان حکومت کی ایک اور کامیابی : ترسیلات زر 7.1 ارب ڈالر کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گئیں

کراچی : کورونا کے باوجود ملکی معاشی اشاریوں میں بہتری کا سفر جاری ہے، کارکنوں کی ترسیلات زر مسلسل چوتھے مہینے بھی 2ارب ڈالر سے زائد رہیں اور ترسیلات زر مجموعی طور پر بڑھ کر7.1ارب ڈالر کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گئیں۔

تفصیلات کے مطابق ترسیلات زر میں مضبوطی کا رجحان ستمبر میں جاری رہا، اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ مسلسل چوتھے مہینے ترسیلات زر دو ارب ڈالر سے زائد رہیں، ستمبر میں ترسیلات زر گزشتہ برس کے مقابلے 31 فیصد اضافے سے 2.30 ارب ڈالر رہی۔

مرکزی بینک کا کہنا تھا کہ اگست کے مقابلے ستمبر میں ترسیلات زر میں 9 فیصد کا اضافہ ہوا، رواں مالی سال کی تیسری سہ ماہی میں ترسیلات زر مجموعی طور پر بڑھ کر7.1ارب ڈالر کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گئیں ، جو گذشتہ برس کی اسی مدت کے مقابلے میں31.1فیصد زیادہ ہے۔

ستمبر میں ترسیلات زر کی سطح اسٹیٹ بینک کی جانب سے2ارب ڈالر کی پیش گوئی سے کچھ زیادہ رہی، پاکستان ریمی ٹینس انیشیٹو (PRI) کی کوششوں اور مشرق وسطیٰ، یورپ اور امریکہ جیسے ترسیلات کے اہم مقامات میں بتدریج بحالی نے کارکنوں کی ترسیلات زر کو مسلسل بڑھانے میں کردار ادا کیا۔

سب سے زیادہ ساڑھے چھیاسٹھ کروڑڈالرز ترسیلات زر سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں نے بھجوائیں جبکہ یو اے ای سے سینتالیس کروڑ تیس لاکھ ڈالرز ترسیلات زر موصول ہوئیں ۔

خیال رہے وزیر اعظم عمران نے ترسیلات زرمیں اضافے کو معیشت کے حوالے خوشخبری قرار دیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں