The news is by your side.

Advertisement

بلاک بسٹر فلم بلیک پینتھر کے ساتھ سعودی عرب میں سینما کی واپسی

ریاض: چالیس سال کی طویل پابندی کے بعد آخر کار سعودی عرب میں آج بدھ کو سنیما کی واپسی ہوگئی ہے، سعودی شہری اسکرین پر دنیا بھر میں بلاک بسٹر فلم بلیک پینتھر دیکھیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پچھلے برس مملکت کے کئی شہروں میں سینما ہاؤسز میں فلموں کی نمائش کھولنے کی منظوری دی گئی تھی جس کے بعد پہلا شو آج دارلحکومت ریاض میں دکھایا جا رہا ہے۔

خیال رہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے مملکت میں بے پناہ اصلاحات لاکر دنیا کے سامنے سعودی عرب کا ایک زیادہ روشن چہرہ پیش کیا ہے، اسی سلسلے میں انھوں نے چار عشروں سے بند سعودی سینما کو بھی بحال کردیا ہے۔

سعودی ولی عہد نے علما کو بھی سینما کے خلاف وعظ کرنے سے سختی سے روک دیا ہے جن کا کہنا تھا کہ سینما سے لوگوں کے اخلاق پر برے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

سعودی سینما میں پہلی فلم کے طور پر ڈزنی کی بلاک بسٹر فلم بلیک پینتھر کو منتخب کیا گیا ہے جس نے پوری دنیا میں تہلکہ مچادیا ہے اور اب تک اویٹار کے بعد دوسری تیزترین بزنس کرنے والی فلم ثابت ہوئی ہے۔

سعودی عرب کی تاریخ میں پہلے فیشن ویک کی شروعات

یہ ایک دل چسپ امر ہے کہ سعودی اخبارات میں اس فلم پر کیا ریویو لکھے جائیں گے، کیا وہ مقامی سیاست کی طرف اشارے کرنے کے لیے آزاد ہوں گے کیوں کہ فلم میں ایسی کئی چیزیں ہیں جن سے مملکت کی سیاست کے ساتھ مماثلت مل سکتی ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں 80 کی دہائی کے آغاز تک فلموں کی نمائش ہوتی رہی ہے، اس کے بعد سینما کو شریعت اور معاشرتی اقدار کے خلاف قرار دیتے ہوئے مکمل طور پر ختم کردیا گیا تھا۔ سینما کی واپسی کے ساتھ دنیا کے سامنے مملکت کی ایک نئی تصویر پیش ہوگی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں