بھارتی اشتعال انگیزی کے خلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع -
The news is by your side.

Advertisement

بھارتی اشتعال انگیزی کے خلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع

لاہور: بھارت کی جانب سے سرحدی حدود کی خلاف ورزی کے خلاف قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی میں قرارداد تحریک انصاف کی نبیلہ حاکم کی جانب سے جمع کروائی گئی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ بھارت کی جانب سے اسکول وین پر بلا اشتعال فائرنگ قابل مذمت ہے۔ اس بھارتی فعل کو برداشت نہیں کیا جا سکتا۔

قرارداد میں کہا گیا کہ بھارت شہری آبادی کو نشانہ بنا کر جینوا کنونشن کی کھلی خلاف ورزی کر رہا ہے۔

قرارداد کے متن کے مطابق گزشتہ ایک سال کے دوران بھارت نے سینکڑوں مرتبہ ایل او سی کی خلاف ورزی کی جس میں کئی پاکستانی شہری معصوم بچے اور سیکورٹی اہلکار نشانہ بنے۔

قرارداد میں سرحدی خلاف ورزی کی شدید مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ بھارت کو خطے میں امن تباہ کرنے سے روکے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز بھارت نے ایل او سی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بٹل سیکٹر پر فائرنگ کی اور اسکول وین کو نشانہ بنایا تھا جس کے نتیجے میں وین کا ڈرائیور شہید ہوگیا جبکہ وین تباہ ہوگئی۔

جواب میں پاک فوج کی جانب سے منہ توڑ جوابی فائرنگ کے نتیجے میں تتہ پانی سیکٹر پر واقعہ بھارتی چیک پوسٹ اڑا دی گئی جس کے نتیجے میں 5 بھارتی فوجی ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں