The news is by your side.

Advertisement

دو بچوں کی ہلاکت : ریسٹورنٹ کے اجزاء میں زہرکی موجودگی کے شواہد نہیں ملے

کراچی : شہر قائد میں ریسٹورنٹ سے مبینہ طور پر مضر صحت کھانا کھانے کے باعث بچوں کی موت کے بعد میڈیکل رپورٹ موصول ہوگئی، رپورٹ میں زہر کی موجودگی کے شواہد نہیں ملے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ڈیفنس میں مضر صحت کھانا کھانے سے دو بچوں دو بچوں ڈیڑھ سالہ احمد اور 5 سالہ محمد کی موت کے واقعہ کے بعد کینڈی فروز، ایری زونا گرل اور پارک سے لئے گئے اکتیس نمونوں کی رپورٹ اے آر وائی نیوز کو موصول ہوگئی۔

رپورٹ میں زہر کی موجودگی کے شواہد نہیں ملے۔ اسی کلو زائد المیعاد گوشت مقامی ریسٹورنٹ سے برآمد کیا گیا تھا۔ کینڈی فروز اور ایریزونا گرل ریسٹورنٹ سے سترہ مختلف کھانوں کے نمونے لیے گئے تھے جو ٹیسٹنگ کیلئے لیبارٹری بھیجے گئے تھے۔

واضح رہے کہ ایری زونا گرل ریسٹورنٹ میں کھانا کھانے کے بعد خاتون اور دو بچوں کی حالت غیر ہو گئی تھی، جس کے نتیجے میں دو بچے محمد اور احمد دم توڑ گئے تھے، بچوں کی والدہ کو بھی اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ کافی روزتک زیر علاج رہیں۔

مزید پڑھیں: ریسٹورنٹ کے مبینہ زہریلے کھانے سے دو بچوں کی ہلاکت، چیف جسٹس نے نوٹس لے لیا

واقعے کے بعد سندھ فوڈ اتھارٹی کی جانب سے ریسٹورنٹ کے گودام پر مارے گئے چھاپے کے دوران بڑی مقدار میں زائد المیعاد گوشت اور دیگر سامان برآمد ہوا تھا،جسے سرجانی ٹاؤن ڈمپنگ پوائنٹ میں تلف کردیا گیا، سندھ فوڈ اتھارٹی نے80 کلو سے زائد گوشت کو زمین میں دبا کر کیمیکل ڈال دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں