The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے: ریٹائرمنٹ کی عمرمیں بھرتی، سی او او دستاویزات جمع نہ کراسکے

کراچی : ریٹائرمنٹ کی عمر کے قریب پی آئی اے میں بھرتی ہونے والے سی او او ضیاء قادرقریشی تعلیمی دستاویزات تاحال جمع نہ کراسکے۔

تفصیلات کے مطابق با کمال لوگ لاجواب سروس کا دعویٰ کرنے والی قومی ایئر لائن پی آئی اے کے سی اواو ضیاء قادر قریشی اپنی تعلیمی دستاویزات تاحال نہ جمع کرا سکے، ان کی عمر چھ روز بعد پوری ساٹھ سال کی ہوجائے گی۔

چودہ جولائی2017کو بھرتی ہونے والے چیف آپریٹنگ افسر ضیاء قادرقریشی نے بھرتی کے وقت دستاویزات کے لئے ڈھائی ماہ کا وقت مانگا تھا، بھرتی کے وقت ان کی عمر59سال8ماہ تھی۔

مذکورہ سی او او کو ایک اعلیٰ شخصیت کے دباؤ پر پی آئی اے میں دو سالہ کنٹریکٹ پر بھرتی کیا گیا تھا، سی او او کی جانب سے دئیے گئے انڈرٹیکنگ میں 30 ستمبر تک کی مہلت طلب کی گئی تھی۔

اس کے علاوہ عمر میں رعایت کے لئے درکار لازمی اجازت کے لئے وزیراعظم ہاؤس کو خط بھی بھرتی کے دو ماہ بعد تحریر کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق ایوی ایشن ڈویژن کی معرفت لکھے گئے خط پر وزیراعظم ہاؤس سے تاحال کوئی جواب نہیں دیا گیا ہے، ضیاء قادر قریشی کی جانب سے دستاویزات جمع نہ کرائے جانے کا مبینہ مقصد عمر میں تضاد کو چھپانا ہے۔


مزید پڑھیں: پی آئی اے: سی او اوکی مدت ملازمت بڑھانے کیلئے حکومت کوخط


اس حوالے سے ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ دستاویزات جمع کرانے کے لئے سی اوا و کی درخواست پر مزید کچھ روز کا وقت دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ ضیاء قادر قریشی کی عمر30اکتوبر کو60 سال کی ہو جائے گی، قانون کے مطابق30اکتوبر کے بعد وہ ازخود ریٹائر ہوجائیں گے اور ملازمت پر نہیں رہ سکتے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں