The news is by your side.

Advertisement

ریاض فتیانہ کا حلقے کے کارکنوں کی بھرتی کے لیے سفارشی خط منظر عام پر آ گیا

ٹوبہ ٹیک سنگھ: چیئرمین قائمہ کمیٹی قانون و انصاف ریاض فتیانہ نے قانون کی دھجیاں اڑا دیں، 13 کارکنوں کی بھرتی کے لیے سفارشی خط لکھ دیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹوبہ ٹیک سنگھ میں قانون و انصاف کی قائمہ کمیٹی کے چیئرمین ریاض فتیانہ نے 13 کارکنوں کی بھرتی کے لیے سفارشی خط لکھ کر قانون کی دھجیاں اڑا دیں۔

پی ٹی آئی رہنما ریاض فتیانہ نے سفارشی خط سی ای او پنجاب ہیلتھ فسیلیٹیز مینجمنٹ کمپنی کو لکھا، عرفان نواز میمن ٹوبہ ٹیک سنگھ میں بہ طور ڈپٹی کمشنر تعینات رہ چکے ہیں۔

ریاض فتیانہ نے سفارشی خط میں لکھا کہ فہرست میں شامل افراد کو انسانی بنیاد پر ملازمت فراہم کی جائے، یہ تمام افراد میرے حلقے این اے 113 سے تعلق رکھتے ہیں۔

خط میں 2 خواتین ظرافت اقبال اور منہا عدین کو بھی ملازمت دینے کی سفارش کی گئی ہے، 5 کارکنوں کو آیا، ڈریسر، فزیو تھراپسٹ، ایڈمنسٹریٹر، فارماسسٹ بھرتی کرنے کی فرمایش کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:  زرتاج گل نے اپنی بہن کی نیکٹا میں بطور ڈائریکٹر تعیناتی سے متعلق خط واپس لے لیا

ریاض فتیانہ نے سفارشی خط میں 8 کارکنوں کو ڈسپنسر، کمپیوٹر آپریٹر، نائب قاصد کی ملازمت دینے کی درخواست کی۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل کے اپنی بہن شبنم گل کی نیکٹا میں تعیناتی کے سلسلے میں لکھے گئے سفارشی خط کا معاملہ بھی شہ سرخیوں کی زینت بنا تھا، جس پر وزیر اعظم عمران خان نے سخت رد عمل ظاہر کیا۔

بعد ازاں 2 جون کو زرتاج گل نے وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر اپنی بہن کی نیکٹا میں بہ طور ڈائریکٹر تعیناتی سے متعلق خط واپس لے لیا۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا تھا کہ ایسے اقدامات سے حکومت اور پارٹی کو نقصان پہنچتا ہے، ماضی کی حکومتوں کے کام نہیں دہرائے جائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں