چاولوں کی ایکسپورٹ کے پیچھے چھپی بھارتی سازش -
The news is by your side.

Advertisement

چاولوں کی ایکسپورٹ کے پیچھے چھپی بھارتی سازش

کراچی: تجارتی منڈی سے خبر سامنے آئی ہے کہ بھارتی تاجرپاکستانی چاول خرید کراسے بھارتی لیبل میں پیک کرکے انڈونیشیا برآمد کر نے کی سازش کر رہے ہیں‘ اس سے قبل کینیا میں یہ واردات کی جاچکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق رائس ایکسپورٹرز ایسو سی ایشن سینئر وائس چیئرمین رفیق سلیمان کا کہنا ہے کہ پاکستانی چاول پر بھارتی لیبل لگاکر انڈونیشیا بر آمد کرنے کی کوشش کی جارہی ہے‘ انہوں نے بتایا کہ حالیہ دنوں میں انڈونیشیا کے حکومتی ادارے بلوگ نے چاول کا ٹینڈر دیا تھا ۔

ذرائع سے انکشاف ہوا ہے کہ کچھ بھارتی کمپنیاں دنیا کا سب سے بہترین پاکستانی چاول خرید کر اور بھارتی لیبل لگا کر انڈونیشیا بر آمد کر نے کی سازش کر رہی ہیں ۔ اس سلسلے میں ایسوسی ایشن کی جانب سے وفاقی وزارت خزانہ ، وزارت تجارت، وزارت خوراک، چیئرمین FBR اور کسٹم حکام کو خطوط روانہ کردیئے گئے ہیں تاکہ اس مذموم کوشش کا بر وقت سد باب کیا جاسکے ۔

رفیق سلیمان کا کہنا تھا کہ اس سے پہلے بھی کینیا میں بھارتی کمپنیاں یہ کام کر چکی ہیں ۔اس لیے حکومتی اداروں کو سفارتی سطح پر ان سازشوں کا مقابلہ کرنے کی منصوبہ بندی کر نے کی ضرورت ہے تاکہ مقامی مارکیٹ کو براہ راست فائدہ ہو۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال یورپی یونین کی جانب سے بھارتی چاول کی امپورٹ پر پابندی کی وجہ سے پاکستانی ایکسپورٹرز کے لیے یورپی منڈی پر بھی دوبارہ ایکسپورٹر ز قبضہ کرنے کے آثار پیدا ہوئے تھے اور درست منصوبہ بندی ہی ایکسپورٹ کے اہداف حاصل کرنے میں مدد فراہم کرسکتی ہے ۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان سے خرید کر دیگر ممالک کو چاول سپلائی کرنے کے پیچھے بھارتی سرمایہ کاروں کا مقصد انڈونیشیا کی مارکیٹ پر اپنی گرفت مضبوط رکھنا ہے‘ تاکہ آئندہ ایسی ہی فصل لگا کر براہ راست منافع حاصل کیا جاسکے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں