The news is by your side.

Advertisement

پستول خاتون کے ہاتھ میں آ گیا، گولی چلنے سے رکشا ڈرائیور جاں بحق

کراچی: ڈیفنس راحت کمرشل میں فائرنگ سے رکشا ڈرائیور کی موت کے واقعے کا ڈراپ سین ہو گیا، خاتون سمیت 2 افراد گرفتار کر لیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ڈیفنس میں فائرنگ سے ایک رکشا ڈرائیور کی موت واقع ہو گئی تھی، جس کے بارے میں کہا جا رہا تھا کہ اسے ڈاکوؤں یا رنگ ساز کی گولی لگی۔

تاہم پولیس کی تفتیش کے دوران واقعے کا ڈراپ سین ہو گیا، رکشا ڈرائیور کی موت ڈاکوؤں یا رنگ ساز کی گولی سے نہیں ہوئی، بلکہ گھر میں موجود خاتون کی فائرنگ سے رکشا ڈرائیور کی جان گئی۔

ایس ایس پی شیراز نذیر نے میڈیا کو بتایا کہ خاتون کے پاس اس کے کزن سجاول کا پستول تھا، سجاول گھر کے اندر اور باہر رنگ کا کام کر رہا تھا، اس دوران رکشا ڈرائیور بچوں کو لے کر گھر میں داخل ہوا، خاتون نے رکشا ڈرائیور کی جانب پستول کیا تو اچانک چل گیا، جس سے ڈرائیور جاں بحق ہو گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  خاتون کے ہاتھ میں سونا دیکھ کر اندازہ لگا لیتا ہوں اصلی ہے یا نقلی: گرفتار رکشا ڈرائیور

پولیس نے خاتون کے ساتھ اس کے کزن کو بھی گرفتار کر کے مقدمہ درج کر لیا، ایس ایس پی کا کہنا تھا کہ مقدمہ قتل خطا کی دفعات کے تحت درج کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز کراچی پولیس نے انکشاف کیا تھا کہ شہر قائد میں رکشا ڈرائیوروں کا ایک گروہ اسٹریٹ کرائم کی وارداتوں میں ملوث ہے، اس سلسلے میں فرئیر پولیس کے ہاتھوں گرفتار رکشا ڈرائیور نے سنسنی خیز انکشافات کیے تھے۔

ڈیفنس اور کلفٹن کے علاقوں میں وارداتیں کرنے والے رکشا ڈرائیور وقاص نے اعترافی بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ خاتون کے ہاتھ میں سونا دیکھ کر اندازہ لگا لیتا تھا کہ اصلی ہے یا نقلی۔ دہلی کالونی میں خاتون پر تشدد کر کے چوڑیاں بھی اتروائی تھیں، سڑک پر خواتین کو دیکھ کر اندازہ لگایا کرتے تھے کس کے پاس مال زیادہ ہوگا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں