ریو اولمپکس : خاتون بھارتی ایتھلیٹ کو پانی بھی نہ مل سکا -
The news is by your side.

Advertisement

ریو اولمپکس : خاتون بھارتی ایتھلیٹ کو پانی بھی نہ مل سکا

ریو ڈی جنیرو: ریو اولمپکس میں بھارت کی نمائندگی کرنے والی ایک خاتون ایتھلیٹ نے کہا ہے کہ میراتھن دوڑ کے دوران بھارتی آفیشلز نے ہمارا کوئی خیال نہیں رکھا، او پی جئشا نے الزام لگایا کہ انہیں پانی اور توانائی والے مشروبات مہیا نہیں کیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ پانی نہ ملنے کی وجہ سے ان کی موت ہو سکتی تھی۔ یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے 42 کلومیڑ طویل میراتھن ریس میں دوڑنے کے بعد جئشا بےہوش ہو گئی تھیں اورانہیں طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

دوسری جانب انڈین آفشلز نے اس الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ جئشا اور ان کے کوچ نے مشروبات لینے سے انکار کر دیا تھا۔

ایتھلیٹکس فیڈریشن آف انڈیا (اے ایف آئی) کا کہنا ہے کہ مشروبات مہیا کرنا منتظمین کی ذمہ داری ہوتی ہے اور اس مقصد کے لیے ریس کے راستے میں مخصوص مقامات پر انتظامات کیے جاتے ہیں۔

انڈیا کے سرکاری خبررساں ادارے پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق جئشا نے اس حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ سخت گرمی میں دوڑ رہی تھیں اور انھیں پانی میسر نہیں تھا ’ آٹھ کلومیٹر دوڑنے کے بعد ہمیں منتظمین کی جانب سے پانی دیا گیا۔‘

جئشا کا مزید کہنا تھا کہ ’ ہر ملک کے دوکلومیٹر کے بعد پانی والے اسٹال موجود تھے تاہم انڈیا کے اسٹال خالی پڑے تھے۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں