The news is by your side.

سعودی عرب: لاکھوں کی جعلسازی کرنے والا گروہ گرفتار

ریاض: سعودی عرب میں لاکھوں کی جعلسازی کرنے والے گروہ کو گرفتار کرلیا گیا، ملزمان لوگوں کو جھانسہ دے کر روزانہ 20 ہزار ریال کما رہے تھے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی عرب میں ریاض پولیس نے مختلف جھانسہ دینے والے پیغامات کے ذریعے لوگوں سے رقمیں ہتھیانے والے 8 رکنی ایشیائی گروہ کو گرفتار کیا ہے۔

ریاض پولیس کے ترجمان شاکر التویجری نے بتایا کہ مذکورہ غیر ملکی ملزم اپنے ہم وطنوں اور مختلف ممالک کے شہریوں کو دھوکہ دے کر ان سے رقمیں ہتھیا رہے تھے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ ملزمان کا طریقہ واردات یہ تھا کہ وہ موبائل پر ایس ایم ایس بھیجتے جس میں انعام نکلنے کی خوشخبری دی جاتی یا یہ اطلاع دی جاتی کہ آپ کا بینک اکاؤنٹ بوجوہ منجمد کر دیا گیا ہے۔ اکاؤنٹ کھلوانے کے لیے اپ ڈیٹ کی کارروائی کروانا ہوگی۔

اس طرح وہ متعلقہ شخص کی بینک کے حوالے سے خفیہ معلومات حاصل کر لیتے اور ان کے اکاؤنٹس سے یا تو کسی اور اکاؤنٹ میں رقم ٹرانسفر کردیتے یا اے ٹی ایم سے پیسے نکال لیتے تھے۔

پولیس ترجمان کا کہنا تھا کہ گرفتار ملزمان کی عمر 30 سے 40 سال کے درمیان ہے، ان کے قبضے سے 37 موبائل سیٹس برآمد ہوئے ہیں جن میں ہزاروں افراد کے نمبر درج تھے۔ موبائل سے دھوکہ دہی والے پیغامات کا ریکارڈ بھی ملا ہے جبکہ 25 ہزار ریال اور کئی اے ٹی ایم کارڈز بھی برآمد ہوئے۔

ترجمان کے مطابق جعلسازوں نے اقبال جرم کرتے ہوئے بتایا کہ وہ اس طریقہ کار سے روزانہ 20 ہزار ریال اس طریقہ کار سے کما رہے تھے۔ تمام افراد کو حراست میں لے کر ایف آئی آر درج کر کے پبلک پراسیکیوشن کے حوالے کردیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں