کابل: افغان صدرکے خطاب کے دوران صدارتی محل پرراکٹ حملے -
The news is by your side.

Advertisement

کابل: افغان صدرکے خطاب کے دوران صدارتی محل پرراکٹ حملے

کابل : افغان دارالحکومت کابل میں حملہ آوروں نے عید کے اجتماع کے دوران صدارتی محل پرراکٹوں سے حملہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق کابل میں حملہ آوروں نے صدراتی محل پرراکٹوں سے اس وقت حملہ کیا جب افغان صدراشرف غنی عید کے اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔

افغان میڈیا کے مطابق صدارتی محل راکٹ حملے کے بعد علاقے میں افغان فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں جبکہ سیکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں دوحملہ آور مارے گئے۔

افغان صدر اشرف غنی کا 3 ماہ کی مشروط جنگ بندی کا اعلان

خیال رہے کہ دو روز قبل افغانستان کے 99ویں یوم آزادی کے موقع پر ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے افغان صدر اشرف غنی نے طالبان سے مشروط جنگ بندی کا اعلان کیا تھا۔

افغان صدر کا کہنا تھا کہ 20 اگست سے 19 نومبر تک فائر بندی رہے گی تاہم یہ اسی صورت برقرار رکھی جائے گی اگر طالبان سیز فائر کا احترام کریں، اگر طالبان نے سیز فائر کی خلاف ورزی کی تو بھرپور جواب دیا جائے گا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز طالبان نے افغان حکومت کے طرف سے کی جانے والی جنگ بندی کی مشروط پیشکش مشترد کردی تھی۔

طالبان کا کہنا تھا کہ جنگ بندی سے صرف امریکا کو ہی فائدہ ملے گا جس کی وجہ سے حملے نہیں روکے جائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں