The news is by your side.

Advertisement

جوڑوں کا درد ختم کرنے والی چائے

جوڑوں کا درد بڑھتی عمر کا سنگین مسئلہ ہے جو روزمرہ کی زندگی کو مشکلات سے دو چار کردیتا ہے، ماہرین نے اب اس کی نہایت کم قیمت دوا کی طرف اشارہ کیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق گرین ٹی یا سبز چائے کی ایک قسم فلورل ٹی بھی ہوتی ہے جس کے بہت سے فوائد سامنے آچکے ہیں۔ ان میں سے ایک قسم کی چائے پھولوں کی پنکھڑیوں کے نیچے موجود ڈنٹھل سے بنائی جاتی ہے۔

اس سے بنی چائے گٹھیا یعنی جوڑوں کے درد اور اندرونی سوزش میں انتہائی مفید ثایت ہوسکتی ہے۔ سرخ اور نارنجی رنگ کے اس ابھار کو روزہپ بھی کہا جاتا ہے۔

اس کے متعلق کہا جاتا ہے کہ یہ دنیا میں وٹامن سی کی سب سےزیادہ مقدار والا قدرتی جزو بھی ہے، لیکن روز ہپ ٹی کی افادیت یہاں تک ہی محدود نہیں کیونکہ روز ہپ ٹی میں کئی مفید کیمیائی اجزا، اینٹی آکسڈنٹس اور فلیونول وغیرہ پائے جاتے ہیں۔

اگرچہ جوڑوں کے درد کا شکار بعض افراد روز ہپ ٹی استعمال کرتے ہیں لیکن بعض سائنسدانوں کا اصرار ہے کہ جوڑوں کے درد میں اس کی افادیت کے ثبوت کم ہیں۔

حال ہی میں جرنل آف نرسنگ اینڈ وومن ہیلتھ میں ایک تحقیق شائع کی گئی جس کے لیے جوڑوں کے درد کے شکار سینکڑوں مرد و خواتین کو شامل کیا گیا۔

ان تمام افراد کو پہلے دو گروہوں میں تقسیم کیا گیا، پہلے گروہ کو روزانہ چائے کی صورت میں 5 گرام روز ہپ کا سپلمنٹ دیا گیا، دوسرے گروہ کو فرضی دوا یا پلیسبو دی گئی۔

جن افراد کو روز ہپ کے اجزا چائے میں ڈال کر پلائے گئے ان کی 65 فیصد تعداد نے اعتراف کیا کہ ان کے جوڑوں کے درد میں افاقہ ہوا ہے، اگرچہ مزید تحقیق کی گنجائش ہے لیکن 65 فیصد افراد نے جب بہتری کا دعویٰ کیا تو اس کی اپنی شماریاتی اہمیت موجود ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں