رائل پام کنٹری کلب کیس، توہین عدالت پر سعد رفیق وریلوے حکام سے جواب طلب -
The news is by your side.

Advertisement

رائل پام کنٹری کلب کیس، توہین عدالت پر سعد رفیق وریلوے حکام سے جواب طلب

لاہور: ہائی کورٹ نے عدالتی احکامات کی خلاف ورزی پر وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق،سیکریٹری ریلوے اور آئی جی ریلوے سے جواب طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں دائر رائل پام گلف اینڈ کنٹری کلب کے انتظامی بلاک کی بندش اور ریلوے کی سیکیورٹی واپس نہ لیے جانے کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت جسٹس شمس محمود مرزا کی سربراہی میں کی گئی۔

دوران سماعت رائل پام انتظامیہ کے وکیل علی ظفر نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ریلوے نے غیر قانونی طور پر رائل پام کلب پر قبضہ کیا جسے چھڑانے کے لیے انتظامیہ نے ہائی کورٹ سے رجوع کیا ہوا ہے۔

وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ’’ہائی کورٹ نے اس کیس پر فیصلہ سناتے ہوئے محکمہ ریلوے کو واضح احکامات جاری کیے ہیں کہ کلب کے تمام تر انتظامات رائل پام کی انتظامیہ ہی دیکھے گی ، ریلوے کے وزیر اور اعلی حکام ان معاملات میں کسی بھی قسم کی مداخلت نہ کریں۔

رائل پام کے وکیل نے دوران سماعت عدالت میں موقف اختیار کیا کہ ہائی کورٹ کے احکامات کے باوجود ریلوے حکام کی جانب سے انتظامی بلاک کو ڈی سیل نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے کلب کے تمام تر معاملات بری طرح متاثر ہوئے ہیں جبکہ ریلوے کی سیکیورٹی کو نہیں ہٹایا گیا، رائل پام کی سیکیورٹی نہ ہونے سے کلب کی انتظامیہ کو ہراساں کیا جارہا ہے ۔

رائل پام کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ عدالتی احکامات کی خلاف ورزی توہین عدالت کے زمرے میں آئی ہے لہذا عدالت وفاقی وزیر ریلوے سمیت اعلیٰ حکام کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی عمل میں لائے، جس پر عدالت نے تمام فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اگلی سماعت پر جواب طلب کرتے ہوئے سماعت کو غیر معینہ مدت تک ملتوی کردیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں