The news is by your side.

Advertisement

کراچی: 800 تاجروں کے این ٹی این بلاک

کراچی: ریجنل ٹیکس آفس کراچی نے 800 تاجروں کے این ٹی این بلاک کردیے جس کے باعث تاجروں کی بڑی تعداد غیرفعال ہو گئی، تاجروں نے این ٹی این بحال ہونے تک ٹیکس کی ادائیگی نہ کرنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹیکس ادائیگی کے معاملے پر ایف بی آر اور محکمہ ویلیو ایشن کے درمیان تنازع جاری ہے جس کے باعث ریجنل ٹیکس آفس نے شہر قائد کے 800 تاجروں کے نیشنل ٹیکس نمبر (این ٹی این) بلاک کردیے۔

پاکستان کیمیکلز اینڈ ڈائز مرچنٹس ایسوسی ایشن کے چیئرمین محمد عارف لاکھانی نے کہا ہے کہ تاجروں کے این ٹی این اَن بلاک کرکے ان کا ایکٹو اسٹیٹس فوری بحال نہ کیاگیا تو تاجروں کی بڑی تعداد ٹیکسوں کی ادائیگی روک دے گی۔

عارف لاکھانی نے کہا کہ تاجروں نے محکمہ ویلیو ایشن کے سیکشن 81 کے تحت جی ڈی کلیئر کرانے کی مد میں پے آرڈر جمع کرا رکھے ہیں اور بعض پے آرڈر کو جمع کرائے دو سال گزر گئے ہیں اس کے باوجود آرٹی او نے تاجروں کو ریکوری کے نوٹسز جاری کردیے ہیں اور اِس مد میں تاجروں پردوبارہ ادائیگیوں کے لیے دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ تنازع محکمہ ویلیو ایشن اور آرٹی او کے درمیان ٹیکس رقم کی منتقلی کا ہے مگر معاملہ آپس میں نمٹانے کے بجائے تاجربرادری کو ہراساں کیا جارہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ این ٹی این بلاک ہونے سے کاروباری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہورہی ہے جبکہ بندرگاہ پر درآمدی کنٹینرز کی کلیئرنس بھی تعطل کا شکار ہورہی ہے جس سے درآمد کنندگان کو بھاری مالی نقصانات کا سامنا کرنا پڑے گا۔

چیئرمین پی سی ڈی ایم اے نے کہا کہ تاجر برادری کو بلیک لسٹ اور سسپینشن میں نہ ڈالا جائے اگر ایسا نہ کیا گیا تو 800 تاجر مزید ٹیکسوں کی ادائیگیاں روک دیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں