The news is by your side.

Advertisement

روس کی یوکرین کی جانب سے جنگی طیارہ گرانے کی خبر کی تردید

ماسکو : روس نے یوکرین کی جانب سے جنگی طیارہ گرانے کی خبر کی تردید کردی اور کہا یوکرین کی مسلح افواج کی فضائی صلاحیتوں کو دبا دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق روسی وزارت دفاع نے یوکرین کی جانب سے جنگی طیارہ گرانے کی خبر کی تردید کرتے ہوئے کہا یوکرینی علاقے میں روسی طیارے کو گرانے کی خبریں درست نہیں۔

روسی وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ یوکرین کی بارڈر سروس کی طرف سے کوئی مزاحمت نہیں ہو رہی ، یوکرین کی مسلح افواج کی فضائی صلاحیتوں کو دبا دیا گیا ہے اور فضائی اڈوں کا ایئر بیس کو ناکارہ کردیا گیا ہے۔

روسی وزارت دفاع نے مزید کہا کہ یوکرین میں شہری علاقوں کو نشانہ نہیں بنائیں گے، شہری آبادیوں کو کوئی خطرہ نہیں ، یوکرین کے فوجی اڈے اور دفاعی تنصیبات ہدف ہیں۔

یاد رہے روس کی جانب سے یوکرین کے مشرقی علاقوں پر حملے کے بعد یوکرینی وزارت دفاع نے دعویٰ کیا تھا کہ یوکرین نے روس کے پانچ جہاز گرائے ہیں۔

وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ افواج نے لوہانسک کے علاقے میں 5 طیارے اور ایک ہیلی کاپٹر کو مار گرایا، یوکرینی فوجی یونٹ اپنی پوزیشنز پر ہیں، دشمن کو دٹ کر جواب دیں گے۔

خیال رہے روس کے صدر ولادیمیر پوٹن کے اعلان جنگ کے بعد یوکرین میں مارشل لاء نافذ کردیا گیا، یوکرائنی وزارتِ داخلہ کا کہنا تھا کہ روس نے بیلسٹک اور کروز میزائلوں سے حملہ کیا ہے لیکن یوکرائن آخری فتح تک اپنا دفاع کرے گا۔

یوکرائنی وزیرداخلہ نے زور دیا تھا کہ روس کوآگےبڑھنےسے روکنے کے لیے عالمی برادری کو فوری حرکت میں آنا ہوگا۔

واضح رہے روسی صدر پیوتن نے آج یوکرین میں علیحدگی پسندوں کی مدد کے لیے فوجی آپریشن کرنے کا اعلان کیا تھا ، جس کے بعد مشرقی یوکرین کےعلاقے ماریوپول میں دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں تھیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں