The news is by your side.

Advertisement

روس نے مہنگائی کیخلاف بڑا قدم اٹھا لیا، ناجائز منافع خور پھنس گئے

ماسکو : روسی حکومت نے مہنگائی کے سدباب کیلئے میں اشیاء خوردونوش کی قیمتوں پر قابو پانے کا سختی سے فیصلہ کرلیا، جس کے بعد تاجروں کے لئے مصنوعی قیمتیں بڑھانا اور ناجائز منافع خوری کرنا ناممکن ہوگا۔

مہنگائی کے حوالے سے روسی حکام نے پرائس کنٹرول سخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے، حکومت کی پریس سروس کی جانب سے کہا گیا ہے کہ روس اب ملک میں اشیاء خود و نوش کی مصنوعات اور راشن کی قیمتوں پر مسلسل نگرانی کرے گا۔

اس سلسلے میں روسی وزراء کی کابینہ کا اجلاس ہوا کابینہ اراکین نے کہا کہ نیا نظام مارکیٹ میں صورتحال کا منظم تجزیہ کرنے، اہم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی پیش گوئی اور اس کو روکنے کے لئے بروقت اقدامات کرنے کے لئے تیار کیا گیا ہے۔

کابینہ اجلاس میں روسی وزارت اقتصادی ترقی کے عہدیدار نے بتایا کہ اس نظام کی بدولت اب متعدد محکمے بیک وقت اشیاء خوردونوش کی قیمتوں کی نگرانی کریں گے۔

روسی حکومت کا مزید کہنا ہے کہ اگر متعلقہ محکموں کو قیمتوں میں اضافے کا پتہ چل گیا تو متعلقہ وزارتوں اور محکموں کو معلومات بھیج دی جائیں گی اور قیمتوں میں اضافہ کرنے والوں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ہر وزارت اپنی مختلف مصنوعات کے مخصوص گروہوں کی ذمہ دار ہوگی جیسا کہ وزارت زراعت خوراک اور تمباکو کی مصنوعات کی انچارج ہے۔

اسی طرح وزارت صنعت و تجارت صارفین کے سامان گھریلو ایپلائینسز، فرنیچر، کمپیوٹرز، ٹیلیفون کے لئے ذمہ دار ہے۔ وزارت صحت طبی مصنوعات، دوائیں، طبی ساز و سامان کی قیمتوں کی ذمہ دار ہے۔

اس کے علاوہ ایندھن کے لئے وزارت توانائی ذمہ دار ہے، وزارت ڈیجیٹل انڈسٹری مواصلاتی سروس کے لئے ذمہ دار ہے، رہائش اور سماجی سروسز کے لئے وزارت تعمیرات ذمہ دار ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں