The news is by your side.

Advertisement

یوکرین تنازع: جنگ کے بادل برقرار

کیف: یوکرائن کے محاذ پر جنگ کے بادل برقرار ہے، روس نے اپنی 75 فیصد فوج یوکرائن کے خلاف تعینات کردی ہے۔

امریکی انٹیلی جنس کی رپورٹ روس کی 160بٹالینز میں سے120 بٹالینز یوکرائن کے سرحد کے قریب ہیں جبکہ 500 کے قریب لڑاکا اور بمبار طیارے بھی یوکرائن کی حدود میں موجود ہیں۔

ادھر روس اور بیلا روس نے فوجی مشقوں میں توسیع کا اعلان کردیا ہے، دونوں ممالک کی فوجی مشقیں اتوار کو ختم ہونا تھیں، لیکن اب جاری رہیں گی، بیلاروس کے صدر کا کہنا ہے کہ مشرقی یوکرائن کی صورتحال کے پیشِ نظر مشقوں میں توسیع کی ہے۔

امریکا اور یورپ نے فوجی مشقوں میں توسیع پر تشویش کا اظہار کیاہے۔

یہ بھی پڑھیں: یوکرین تنازع: روسی دعویٰ مسترد، نیٹو کی روس کو دھمکی

ادھر میونخ سیکیورٹی کانفرنس کے موقع پر نیٹو کے سربراہ ژینس اسٹولٹن برگ نے بھی اس خدشے کا اظہار کیا تھا کہ یوکرائن پر روسی حملے کا خطرہ بہت زیادہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ مشرقی یوکرائن میں گزشتہ ایک ہفتے سے کیف حکومت کے دستوں اور ماسکو کے حمایت یافتہ علیحدگی پسندوں کے مابین معمولی جھڑپیں جاری ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں