The news is by your side.

’اثاثے ضبط کیے تو امریکا کے ساتھ تعلقات ختم ہو جائیں‌ گے‘

ماسکو: روس نے امریکا کو اثاثوں کی ضبطگی کے نقصان دہ نتائج سے خبردار کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق روسی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ امریکا کی جانب سے روسی اثاثوں کی ممکنہ ضبطگی سے ماسکو کے واشنگٹن کے ساتھ دوطرفہ تعلقات مکمل طور پر ختم ہو جائیں گے۔

روسی وزارت خارجہ کے محکمہ شمالی امریکا کے سربراہ الیگزینڈر ڈارچیو نے ایک انٹرویو میں کہا کہ ہم امریکیوں کو ایسے اقدامات کے نقصان دہ نتائج سے خبردار کرتے ہیں جو دوطرفہ تعلقات کو مستقل طور پر نقصان پہنچائیں گے۔ انھوں نے کہا یہ نہ تو ان کے اور نہ ہی ہمارے مفاد میں ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق یہ فوری طور پر واضح نہیں ہو سکا کہ ان کا اشارہ کن اثاثوں کی طرف تھا۔ الیگزینڈر ڈارچیو کا کہنا تھا کہ روس نے امریکا کو خبردار کیا ہے کہ اگر روس کو دہشت گردی کی سرپرستی کرنے والی ریاست قرار دیا گیا تو سفارتی تعلقات بری طرح متاثر ہوں گے اور ٹوٹ بھی سکتے ہیں۔

یوکرین کی صورتحال کے حوالے سے انھوں نے کہا کہ امریکا کا کیف پر اثر و رسوخ اس قدر بڑھ چکا ہے کہ وہ اس تنازع میں تیزی سے براہ راست فریق بن رہے ہیں۔

واضح رہے کہ روس کے مغرب کے ساتھ تعلقات رواں برس 24 فروری کو ماسکو کے یوکرین پر حملے کے بعد سے شدید تنزلی کا شکار ہیں۔ روسی حملے کا جواب مغرب کی جانب سے غیر معمولی اقتصادی، مالی اور سفارتی پابندیوں کی صورت میں دیا گیا۔ روس کے تقریباً نصف سونے اور زرمبادلہ کے ذخائر کو بھی منجمد کر دیا گیا جو 24 فروری سے پہلے 640 ارب ڈالر کے قریب تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں