The news is by your side.

Advertisement

روسی فوج نے جدید جنگی ہتھیار حاصل کرلیا، دشمنوں کی نیندیں اڑ گئیں

ماسکو : یورپی یونین کی جانب سے پابندیوں کے باوجود روس اپنی فوجی طاقت میں اضافہ کررہا ہے، روسی فوج کو بی ایم پی ٹو انفنٹری سے لڑنے والی گاڑیوں کا ایک دستہ فراہم کردیا گیا۔

اس حوالے سے یورال ویگنزاوڈ پریس آفس نے بتایا کہ ارالگونزاوڈ دفاعی کارخانہ دار نے روسی فوج کو بی ایم پی ٹو انفنٹری سے لڑنے والی گاڑیوں کا ایک بیچ جو جدید ترین الیکٹرانکس، مواصلات اور نیوی گیشن سسٹم سے آراستہ ہے فراہم کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پریس آفس کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یورال ویگنزاوڈ کی560 ویں آرمر ریپریمنٹ پلانٹ نے روسی فوج کے لئے دفاعی خریداری کے منصوبے کے تحت بی ایم پی ٹو گاڑیوں کا ایک دستہ روانہ کیا ہے۔

یورال ویگنزاوڈ نے بتایا کہ مرمت کے دوران ماہرین نے گاڑیوں کے جہاز پر چلنے والے الیکٹرانکس، مواصلات اور نیوی گیشن سسٹم کو مکمل طور تبدیل کردیا اور ان کے پاور پلانٹ اور ٹرانسمیشن سسٹم کی بحالی کی۔

واضح رہے ان ہتھیاروں میں روسی فوج کے لئے ایک بی ایم پی ٹو بکتر بند ہے جو کہ بنیادی طور پر ایک ٹریک شدہ اہداف کے لئے لڑنے والی گاڑی ہے جو 30 ملی میٹر 2 اے 42 آٹومیٹک گن اور 7.62 ملی میٹر پی کے ٹی مشین گن سے لیس ہے۔

اس جنگی گاڑی کا عملہ تین افراد پر مشتمل ہے لیکن اس میں سات اہلکار تک بیٹھ سکتے، بی ایم پی ٹو کی باقاعدہ پیداوارسال1980میں شروع کی گئی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں