The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ وادی میں تیسرے روز بھی شٹر ڈاؤن ہڑتال

سری نگر : بھارتی جارحیت کے خلاف مقبوضہ کشمیر میں آج بھی ہڑتال ہے، تمام کاروباری مراکز، دکانیں اور تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔

بھارتی جارحیت اور سبزار احمد بھٹ کی شہادت پر مقبوضہ وادی میں تیسرے روز بھی شٹر ڈاون ہڑتال ہے، اسکول اور تجارتی مراکز بند ۔۔شاہراہیں ویران ہیں۔

شہید حریت رہنما سبزار احمد کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے آج ترال تک مارچ کیا جائے گا، بھارتی فورسز نے ریلی روکنے کیلئے علاقوں میں کرفیو نافذ کردیا ۔

ڈائریکٹر ہیومن رائٹس واچ نے بھارتی آرمی چیف کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کشمیری شخص کو ڈھال بنانے والے بھارتی میجر کی حمایت کر کے بھارتی آرمی چیف نے مجرمانہ لیڈر شپ کامظاہرہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ بھارتی آرمی چیف نے کشمیری شخص کوجیپ سے باندھ کر انسانی ڈھال بنانے کے عمل کو جدید حکمت عملی کہا تھا۔

یاد رہے کہ برہان وانی کے ساتھی کی شہادت پر حریت رہنماوں نے دو روز تک ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کیا تھا۔


مزید پڑھیں : مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج نے11کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا


بھارتی فورسزنے ہفتے کے روز برہان وانی کے ساتھی سبزر احمد بٹ سمیت گیارہ کشمیری نوجوان شہید کئے تھے، پلوامہ کے علاقے ترال میں برہان وانی کےقریبی ساتھی کمانڈر سبزار بھٹ نے دو ساتھیوں سمیت جام شادت نوش کیا۔سبزار بھٹ کی شہادت پر ہنگامے پھوٹ پڑے، اس کی اطلاع پورے کشمیر میں جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی اور پورا کشمیر سراپا احتجاج بن گیا۔

ترال میں حریت رہنما کی جائے شہادت پر ہزاروں کشمیریوں نے مظاہرہ کیا، رام پور اور اڑی میں بھارتی فوج نے آٹھ حریت پسند شہید کیے ۔شہادتوں کے بعد لوگ سڑکوں پرآگئے،قابض فوجیوں نے مظاہرین پر پیلٹ گن سے فائر کیے۔ جس سے متعدد کشمیری زخمی ہوگئے تھے۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال برہان وانی کی ہلاکت کے بعد کشمیر میں وسیع پیمانے پر عوامی تحریک شروع ہوئی جسے دبانے کی بھارتی فوج کی بزدلانہ کارروائیوں میں کم از کم سو افراد مارے جا چکے ہیں جبکہ ہزاروں گولیوں اور چھروں سے زخمی ہوگئے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں