The news is by your side.

Advertisement

صادق سنجرانی، سابق وزرائے اعظم کے معاون سے دوسری بار چیئرمین سینیٹ تک

اسلام آباد: سینیٹ الیکشن میں حکومت کی جانب سے نامزد کردہ امیدوار صادق سنجرانی مسلسل دوسری بار چیئرمین سینیٹ منتخب ہوگئے ہیں، انہوں نے48 ووٹ حاصل کئے، ان کے مد مقابل پاکستان پیپلزپارٹی اور پی ڈی ایم کے امیدوار یوسف رضا گیلانی 42 ووٹ حاصل کرسکے۔

پہلی بار صادق سنجرانی کے نام کی تجویز بلوچستان سے کی گئی تھی، اس بار حکومت نے سینیٹ انتخابات کے فوری بعد انہیں چیئرمین سینیٹ کا امیدوار نامزد کیا تھا۔

صادق سنجرانی کون ہیں؟

میر صادق سنجرانی کا تعلق بلوچستان کے ضلع چاغی کے علاقے نوکنڈی سے ہے، ان کے والد خان محمد آصف سنجرانی کا شمار علاقے کے قبائلی رہنماؤں میں ہوتا ہے جبکہ وہ ضلع کونسل چاغی کے رکن بھی رہ چکے ہیں۔

میرصادق سنجرانی 14اپریل 1978 کوبلوچستان کے ضلع چاغی کے علاقے نوکنڈی میں پیدا ہوئے، انہوں نے ابتدائی تعلیم نوکنڈی میں حاصل کی، بعد ازاں انہوں نے بلوچستان یونیورسٹی سے ایم اے کیا اور اسلام آباد منتقل ہوگئے۔

مزید پڑھیں: صادق سنجرانی چیئرمین سینیٹ منتخب

میرصادق سنجرانی پانچ بھائیوں میں سب سے بڑے ہیں، ان کے ایک بھائی اعجاز سنجرانی نواب ثنا اللہ زہری کے دور حکومت میں محکمہ خزانہ کے مشیر رہ چکے ہیں، گزشتہ عام انتخابات میں ہونے والی حکومت کی تبدیلی کے باوجود وزیر اعلیٰ عبدالقدوس بزنجو نے انہیں اس عہدے پر برقرار رکھا تھا۔

میر صادق سنجرانی کے ایک اور بھائی محمد رازق سنجرانی سینڈک پروجیکٹ کے مینیجنگ ڈائریکٹر بھی رہے ہیں۔

سابق حکومتوں کے ساتھ کام

میر صادق سنجرانی 1998 میں سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کے معاون (کوآرڈینیٹر) بھی رہ چکے ہیں۔ بعد ازاں 2008 میں یوسف رضا گیلانی نے وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالا تو ایک شکایتی سیل قائم کیا جس کی سربراہی انہوں نے میر صادق سنجرانی کو دی، جہاں وہ پانچ سال تک بطور سربراہ امور انجام دیتے رہے۔

پہلی بار چیئرمین سینیٹ کا انتخاب

تین سال قبل میر صادق سنجرانی کا نام بطور امیدوار چیئرمین سینیٹ وزیراعلٰی بلوچستان نے دیا تھا جس پر پیپلزپارٹی، تحریک انصاف اور متحدہ قومی موومنٹ نے ان کی حمایت کا اعلان کیا تھا۔

مزید پڑھیں: ماضی سے پیوستہ: بلاول بھٹو نے صادق سنجرانی کی فتح‌ کو ریاست کی فتح قرار دے دیا

سال 2018 میں عبدالقدوس بزنجو اور میر صادق سنجرانی بلوچستان سے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑ کر سینیٹر منتخب ہوئے تھے، یاد رہے کہ صادق سنجرانی کا کبھی عوامی سیاست سے کوئی تعلق نہیں رہا، ان کی پہچان کاروباری شخصیت کے طور پر ہوتی تھی، ان کا کاروبار بلوچستان کے علاوہ دبئی تک پھیلا ہوا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں