The news is by your side.

Advertisement

’’کراچی لاک ڈاؤن، کرفیو جیسی صورتحال ہوگی‘‘

کراچی: وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس سے عوام کی جان بچانی ہے تو سخت لاک ڈاؤن کی طرف جانا ہوگا، کرفیو نہیں ہوگا لیکن کرفیو جیسی ہی صورتحال ہوگی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کی زیر صدارت اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے، ٹاسک فورس نے لاک ڈاؤن مزید سخت کرنے کی سفارش کی گئی۔

سعید غنی کا کہنا ہے کہ ہمیں لاک ڈاؤن کا فیصلہ کسی دوسرے صوبے کو دیکھ نہیں کرنا، ہمیں عوام کی جانیں بچانے کے لیے فیصلہ کرنا ہے، ہم لوگوں‌ کی جانیں بچائیں گے۔ اگر سندھ کو خود فیصلہ کرنا ہے تو سخت لاک ڈاؤن کی طرف جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب جیسا لاک ڈاؤن کیا تو ایک سال کرونا سے جان نہیں چھڑا پائیں گے، ملیر کے 2 علاقے سیل کردئیے ہیں، ڈسٹرکٹ ویسٹ کے کچھ علاقوں کو بھی سیل کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں: کراچی کے مزید علاقوں کو بھی سیل کرنے کا عندیہ

واضح رہے کہ اس سے قبل ڈپٹی کمشنر ایسٹ کی جانب سے کراچی کی 11 یوسیز کو سیل کرنے کا اعلان کیا گیا تھا، جن میں گلشن ٹاؤن اور صدر ٹاؤن کی یوسیز شامل ہیں۔

خرم شیرزمان اور حافظ نعیم الرحمان کی جانب سے ڈی سی ایسٹ کے اس اقدام پر انہیں تنقید کا نشانہ بنایا گیا، سیاسی جماعتوں کا موقف ہے کہ یوسی سیل کرنے سے قبل وہاں رہائش پذیر لوگوں کے کھانے کے بارے میں سوچنا چاہئے تھا کہ وہ کس طرح گزارہ کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں