The news is by your side.

Advertisement

ایم کیوایم کو جب بھی خطرہ ہوتا ہے لسانی سیاست شروع کردیتی ہے، سعید غنی

کراچی : پیپلزپارٹی کے رکن سندھ اسمبلی سعید غنی نے کہا ہے کہ ایم کیوایم کو جب بھی خطرہ لگتا ہے لسانی سیاست شروع کردیتی ہے، اس بار متحدہ کو ماضی جتنی نشستیں نہیں ملیں گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، سعید غنی نے کہا کہ پہلے ایم کیوایم دیہی اور شہری علاقوں میں فرق کو مٹانے کی باتیں کیا کرتی تھی جبکہ اب یہی ایم کیوایم اب فاصلے بڑھانے کی باتیں کررہی ہے کیونکہ ایم کیوایم کو جب بھی خطرہ محسوس ہوتا ہے وہ لسانی سیاست شروع کردیتی ہے۔

رہنما پیپلزپارٹی نے کہا کہ ایم کیوایم مذموم مقاصد کیلئے لوگوں میں دوبارہ نفرت پیدا کررہی ہے، اس عمل کی پرزور مذمت کرتے ہیں، مذہبی انتہاء پسندی کے ساتھ لسانی انتہاء پسندی بھی قابل مذمت ہے۔

سعید غنی نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی کراچی کے لوگوں سے ووٹ مانگنے جارہی ہے چھیننے نہیں، خبریں ملی ہیں کہ ہمارے جلسے میں آنیوالوں کو ایم کیوایم کی جانب سے دھمکایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں ایم کیوایم کی سیاست کی وجہ سے ہزاروں لوگ مارے گئے، لوگوں کے ذہنوں میں دوبارہ یہ زہر گھولا گیا تو شہر میں خونریزی ایک بار پھر لوٹ آئے گی، قانون نافذ کرنے والے اداروں کو چاہیے کہ وہ شہروں میں نفرت انگیز سیاست کا نوٹس لیں۔

انہوں نے کہا کہ مجھے سو فیصد یقین ہے کہ آئندہ الیکشن میں ایم کیوایم کو ماضی جتنی نشستیں نہیں ملیں گی اور نہ ہی ایم کیوایم کو ماضی والی سہولتیں میسرنہیں آئیں گی، وہ دن گئے جب اسکولوں پر قبضےکرکے ووٹ چھین لئے جاتے تھے۔

ایک سوال کے جواب میں سعید غنی نے کہا کہ راؤانوار نے اگر کوئی غلط کام کیا ہے تو کیا اس کی سزا پورے شہر کو ملےگی؟ عدالت میں اگر کوئی جرم ثابت ہوتا ہے توراؤ انوار کو لازمی اس کی سزا ملنی چاہیے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔  

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں