site
stats
انٹرٹینمںٹ

بیٹا کوئی بھی مذہب اختیار کرسکتا ہے، سیف، کرینہ

ممبئی: بالی ووڈ اداکارہ کرینہ کپور کے خاوند سیف علی خان نے کہا ہے کہ تیمور کو کوئی بھی مذہب اختیار کرنے کی آزادی کا حق حاصل ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکار سیف علی خان نے کہا کہ تیمور کو مکمل آزادی ہے کہ وہ ماں باپ کے مذہب کے علاوہ بھی کسی اور مذہب کو منتخب کرسکتا ہے اس ضمن میں ہم دونوں نے اُسے پوری آزادی دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بطور والد اپنے بیٹے کو کھلے ذہن اور اچھی شخصیت کا حامل انسان دیکھنا چاہتا ہوں مگر میری اہلیہ کرینہ تیمور بیٹے کو لبرل اور عاجز انسان دیکھنے کی خواہش رکھتی ہیں اس لیے ہم دونوں نے فیصلہ کیا کہ اُسے جو پسند ہو اُسی راہ پر چلے۔

پڑھیں: ’’ تیمور سے کتنا پیار کرتی ہوں وقت ثابت کرے گا، کرینہ کپور ‘‘

یاد رہے کہ بالی ووڈ جوڑے کی شادی 2012 میں ہوئی تھی اور گزشتہ برس اُن کے بیٹے کی پیدائش ہوئی جس کا نام مسلمانوں کی مناسبت سے تیمور علی خان رکھا گیا ہے۔ بیٹے کی پیدائش سے قبل قیاس آرائیاں دیکھنے میں آئی تھیں۔

تیمور کی پیدائش کے بعد انڈسٹری میں مصروفیات کے باعث مختلف لوگوں کی جانب سے کرینہ کو تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا، جس پر انہوں نے دو ٹوک مؤقف اختیار کرتے ہوئے کہا تھا کہ بیٹے سے کتنا پیار کرتی ہوں، یہ وقت ثابت کرے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top