The news is by your side.

’واہگہ بارڈر‘ پر پاکستانی جھنڈا کیوں لہرایا؟ سلمان خان کا پرچہ کٹ گیا

ممبئی: بھارت کے واہگہ بارڈر پر پاکستانی پرچم لہرانے کی وجہ سے سلمان خان کے خلاف انتہاء پسندوں نے مقدمہ درج کرادیا۔

تفصیلات کے مطابق بالی ووڈ کے دبنگ خان اور کترینہ کیف نئی آنے والی فلم ’بھارت‘ کا ایک سین واہگہ بارڈر کے مقام پر عکس بند ہونا تھا مگر سیکیورٹی صورتحال کی وجہ سے حکومت نے کاسٹ کو شوٹنگ کی اجازت نہیں دی۔

فلم ڈائریکٹر  نے سین کو عکس بند کرنے کے لیے بھارتی پنجاب کے ایک گاؤں میں ’واہگہ بارڈر‘ کا سیٹ تیار کیا مگر وہاں کی مقامی پنجائیت نے اس پر اعتراض اٹھا دیا۔

ڈائریکٹر علی عباس نے مقامی کسانوں اور تاجروں کے نقصانات کا ازالہ کیا اور شوٹنگ کے لیے جگہ فراہم کرنے کے پیسے بھی ادا کیے مگر وہ  سیٹ پر پاکستانی پرچم لگانے پر کسی صورت رضا مند نہیں تھے۔

مزید پڑھیں: سلمان اور کترینہ کی سیکیورٹی فوج نے سنبھال لی

ہدایت کار علی عباس کے قریبی ذرائع نے ’بھارتی میڈیا سے بات کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی کہ بھارتی سرزمین پر پاکستانی جھنڈا لہرانے  کی وجہ سے مقامی تنظیمیں سراپا احتجاج ہیں، ہم نے ماضی میں بھی ایسی صورتحال کا سامنا کیا ہے’۔

گاؤں کی مقامی تنظیموں نے پاکستانی پرچم لگانے پر سلمان خان کے ہوٹل کا گھیراؤ کیا اور اُن کے خلاف مقدمہ بھی درج کروایا، صورتحال کشیدہ ہونے کی وجہ سے ہدایت کار نے فلم کی شوٹنگ ادھوری چھوڑ ی اور کاسٹ کو جلد از جلد گاؤں سے نکلنے کی ہدایت کی۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق سلمان خان اور کترینہ واپس ممبئی پہنچ گئے تاہم اُن کے خلاف ایک اور مقدمہ درج ہوگیا۔

View this post on Instagram

Journey of A man and nation together @bharat_thefilm @beingsalmankhan @katrinakaif @whosunilgrover @dishapatani

A post shared by ali (@aliabbaszafar) on

قبل ازیں فلم ’بھارت‘ کا ایک پوسٹر جاری کیا گیا تھا جس میں سلمان خان اور کترینہ کیف واہگہ بارڈر کے دروازے پر کھڑے نظر آرہے تھے۔

دورانِ شوٹنگ سلمان خان زخمی

دوسری جانب بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق سلمان خان دورانِ شوٹنگ زخمی ہوگئے تھے، ڈاکٹرز نے انہیں آرام کرنے کا مشورہ دیا جس کی وجہ سے وہ ممبئی روانہ ہوگئے۔

رپورٹس کے مطابق سلمان خان جلد صحت یابی کے بعد ایک بار پھر بھارت کی شوٹنگ کا آغاز کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں