کشمیریوں سے غداری نے حکمرانوں کو پاناما میں پھنسایا، مولانا سمیع الحق Islamabad
The news is by your side.

Advertisement

کشمیریوں سے غداری نے حکمرانوں کو پاناما میں پھنسایا، مولانا سمیع الحق

اسلام آباد: جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ اور دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق نے کہا ہے کہ کشمیریوں سے غداری نے حکمرانوں کو پاناما کی مصیبت میں ڈالا۔

اسلام آباد میں منعقدہ دفاع پاکستان کونسل کے تحت شہدائے کشمیر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا سمیع الحق نے کہا کہ کشمیر کی آزادی کے لیے ہماری جانیں حاضر ہیں مگر ہمارے حکمران کشمیریوں سے ہردور میں غداری کرتے آئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاناما کی مصیبت کشمیریوں سے غداری کا نتیجہ ہے، پاکستان کا مال لوٹنے والوں کو سخت سزا ملنی چاہیے کیونکہ ہمارے حکمران امریکا کی کٹھ پتلیاں ہیں اور سارے کام اُسی کے اشاروں پر کرتے ہیں۔

اس موقع پر حزب المجاہدین کے کمانڈر سید صلاح الدین نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ ’’حکمران سامراجی قوتوں کو خوش کرنے کے لیے کشمیریوں کے مقدس لہو سے غداری کررہے ہیں جبکہ پاکستانی قوم مظلوم کشمیر کے ساتھ کھڑی ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کی آزادی قریب ہے جس کے بعد برصغیر کا نقشہ تبدیل ہوجائے گا، بھارتی مسلمانوں کو بھی مودی حکومت کے مظالم سے چھٹکارا جلد ملنے والا ہے۔

معروف قانون دان احمد رضا قصوری نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قائد اعظم نے کشمیر کو پاکستان کی شہہ رگ قرار دیا تھا، برہان وانی کی شہادت نے تحریک آزادی میں نئی روح پھونک دی۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے حکمران کلبھوشن کا نام تک نہیں لیتے جبکہ بھارت حریت رہنماؤں کو دہشت گرد قرار دیتا ہے، بھارتی میڈیا میں بھی حافظ سعید کے حق میں آواز بلند کرتا ہوں۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں