The news is by your side.

Advertisement

بھارتی وزیرجنسی زیادتی کے الزام میں گرفتار

دہلی : بھارتی دارالحکومت دہلی میں پولیس نےعام آدمی پارٹی کے سابق وزیر برائے خواتین اور بچوں کی بہبود سندیپ کمار کو جنسی زیادتی کا الزام لگنے کے بعدگرفتار کر لیا.

تفصیلات کے مطابق تین روز قبل ایک مبینہ ٹیپ منظر عام پر آنے کے بعد سندیپ کمار کو ان کے عہدے سے برطرف کر دیا گیا ہے.اس ویڈیو میں انہیں ایک خاتون کے ساتھ مبینہ طور پردیکھا جاسکتا تھا.

ویڈیو میں نظر آنے والی خاتون کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ تقریباً ایک برس قبل کا ہے اور یہ ویڈیو ان کے علم کے بغیر بنائی گئی ہے.اس خاتون نے اب سابق وزیر پر زیادتی کا الزام لگایا ہے.

دوسری جانب سندیپ کمار کا کہنا ہے کہ وہ کسی قسم کی غلط حرکت نہیں کی ہے اور مبینہ ویڈیو جعلی ہے.

انہوں نے کہا کہ جس سی ڈی کے حوالے سے انہیں برطرف کیا گیا ہے اس میں وہ نہیں ہیں. یہ تفتیش کا معاملہ ہے اور میرا میڈیا ٹرائل کیا جارہا ہے.

دہلی میں اس وقت عام آدمی پارٹی کی حکومت کا کہنا ہے کہ وہ اسکینڈل یا بدعنوانی کو کسی بھی صورت میں برداشت نہیں کرے گی.

اس سے قبل دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کا کہنا تھا کہ ان کو سندیپ کمار کی ایک ’قابل اعتراض‘ سی ڈی موصول ہوئی تھی اور کمار کو عہدے سے ہٹا دیا گیا.

واضح رہے کہ عام آدمی پارٹی کی دہلی میں حکومت ہے اور وہ اس جماعت کے ایسے دوسرے وزیر ہیں جن کو عہدے سے برطرف کیا گیا.گذشتہ سال وزیر خوراک کو رشوت لینے کے الزام میں برطرف کیا گیا تھا.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں