سینیٹ کا اجلاس: پی ٹی وی میں تقرریوں کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم -
The news is by your side.

Advertisement

سینیٹ کا اجلاس: پی ٹی وی میں تقرریوں کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم

اسلام آباد : سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انفارمیشن کا اجلاس سینیٹر کامل علی آغا کی صدارت میں پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوا۔

اجلاس میں پاکستان ٹیلی وژن کارپوریشن کی کارکردگی اور تقرریوں کے حوالے سے چیئرمین کمیٹی نے ایم ڈی پی ٹی وی کی سرزنش کی اور حکم دیا کہ کمیٹی کے آئندہ اجلاس میں گزشتہ دس سالوں کی تقرریوں سے متعلق ریکارڈ کمیٹی میں پیش کردیں.

کمیٹی کے ممبر ڈاکٹر اشوک کمار نے پی ٹی وی کے ایم ڈی پر الزام لگایا کہ گزشتہ دس سالوں میں ایک بھی بلوچ پی ٹی وی اسلام آباد میں تقرر نہیں کیا گیا ۔

ایک طرف بلوچستان کی ترقی اور احساس محرومی دور کرنے کے بلند و بانگ دعوے کئے جاتے ہیں تو دوسری طرف چھ فیصد کوٹہ ہونے کے بوجود بلوچوں کو نوکریاں نہیں دی جاتیں ۔

چیئرمین کمیٹی نے ایم ڈی پی ٹی وی مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ آپ مجھ سے بات کریں ممبر کمیٹی سے براہ راست مخاطب نہ ہوں۔

اجلاس میں وزارت انفارمیشن کی جانب سے سپریم کورٹ میں غلط بیانی پر فرحت اللہ بابر اور روبینہ عرفان نے ٹوکن واک آؤٹ کیا ۔

اجلاس میں بول ٹی وی کے لائسنس سے متعلق چیئرمین پیمرا سے بھی بریفنگ لی گئی ۔چیئرمین پیمرا نے کمیٹی کو بتایا کہ 350کیسززیر التوا ہیں ۔بول ٹی وی کا صرف لائسنس معطل ہے منسوخ نہیں کیا گیا ۔اجلاس کے آخر میں ایم ڈی لوک ورثہ ڈاکٹر فوزیہ نے ادارے کی کارکردگی پیش کی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں